Masood Rana - مسعودرانا Masood Rana sang 1034 songs in 648 films

مسعودرانا اور احتشام ، مستفیض

Ehtesham Mustafeez
احتشام اور مستفیض ، ہدایتکار بھائیوں کی ایک کامیاب ترین جوڑی تھی جنہوں نے سابقہ مشرقی پاکستان میں اردو فلمیں بنانے یا ڈھاکہ میں بننے والی بنگالی فلموں کو اردو میں ڈب کرنے کا آغاز کیا تھا۔۔!

احتشام اور مستفیض
مشرقی پاکستان کی اردو فلموں میں
ہدایتکاروں کی ایک کامیاب ترین جوڑی تھی
قیام پاکستان کے وقت صرف لاہور میں فلمیں بنتی تھیں جہاں 1925ء میں پہلی فلم دا لائٹ آف ایشیاء بنائی گئی تھی۔ آزادی کے بعد 1955ء میں کراچی میں پہلی اردو فلم ہماری زبان اور 1956ء میں ڈھاکہ میں پہلی بنگالی فلم مکھ و مکھوش سے فلمسازی کا آغاز ہوا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ کراچی اور ڈھاکہ کی ابتدائی دونوں فلمیں زبان کے مسئلہ پر بنائی گئی تھیں جو اس وقت اردو اور بنگالی بولنے والوں کے درمیان سب سے بڑا سیاسی تنازعہ تھا۔ پاکستان کے ابتدائی دور میں کئی برسوں پر پھیلے ہوئے اس قومی بحران کا نتیجہ یہ نکلا تھا کہ حکومت نے گھٹنے ٹیک دیئے تھے اور بنگالی کو بھی دوسری سرکاری زبان بنانے کا مطالبہ تسلیم کر لیا تھا۔ لیکن اس کے لئے 1952ء میں ڈھاکہ کے چند بے گناہ طالب علموں کے خون کی قربانی دینا پڑی تھی جن کی یاد میں دنیا بھر میں 21 فروری کو مادری زبان کا عالمی دن منایا جاتا ہے لیکن اس دن کی ہمارے کنٹرولڈ اور مظلوم میڈیا کو خبر تک نہیں ہوتی۔

Chakori (1967)
Talash (1963)
سابقہ مشرقی پاکستان میں 24 برسوں کے دوران کل دوسو سے زائد فلمیں بنائی گئی تھیں جن میں سے 57 اردو فلمیں تھیں۔ جدید تحقیق یہ بتاتی ہے کہ اصل میں ان میں زیادہ تر فلمیں بنگالی زبان میں تھیں اور انہیں اردو میں ڈب کر کے مغربی پاکستان کے لاہور اور کراچی سرکٹوں میں پیش کیا جاتا تھا تا کہ وہ زیادہ بزنس کر سکیں۔ چکوری (1967) اور تلاش (1963) جیسی بڑی فلمیں اس کی ایک بہت بڑی مثال ہیں۔ پاکستان فلم میگزین پر مشرقی پاکستان کی فلموں کا ایک مخصوص صفحہ ترتیب دیا گیا ہے جہاں باقی تفصیلات اپ ڈیٹ کی جاتی ہیں۔

ڈھاکہ میں بننے والی پہلی کمرشل اردو فلم چندا (1962) تھی جس کے ہدایتکار اور کہانی نویس احتشام تھے۔ اس سے اگلے سال کی فلم تلاش (1963) کے ہدایتکار اور کہانی نویس مستفیض اور فلمساز احتشام تھے۔ ان دونوں بھائیوں کا فلمساز ادارہ دوسانی فلمز تھا۔ ایسے لگتا تھا کہ ان دونوں بھائیوں نے اپنی اپنی باری مقرر کر رکھی تھی کہ فلموں کے ٹائٹل پر وہ باری باری ، اپنا اپنا نام دیں گے کیونکہ کل 16 فلموں میں سے آدھی آدھی فلمیں دونوں کے کریڈٹ پر ہیں۔ ان میں سے 13 فلمیں سقوط ڈھاکہ سے قبل بنائی گئی تھیں جن کی ایک مکمل فہرست کچھ اس طرح سے تھی:

چندا (1962) ، تلاش (1963) ، پیسے (1964) ، مالا ، ساگر (1965) ، ڈاک بابو (1966) ، چکوری ، چھوٹے صاحب (1967) ، چاند اور چاندنی ، داغ ، قلی (1968) ، اناڑی (1969) اور پائل (1970)

ان کے علاوہ احتشام نے سقوط ڈھاکہ کے بعد پاکستان میں دو فلمیں بنائی تھیں جن میں پہلی فلم ایک تھی لڑکی (1973) تھی۔ اس فلم کی خاص بات یہ تھی کہ اس کے تین ہدایتکار تھے جن میں فلم نائیلہ (1965) اور دوستی (1971) کے شہرت یافتہ ہدایتکار شریف نیر ، فلم انجمن (1970) اور امراؤ جان ادا (1972) سمیت بے شمار ہٹ فلموں کے ہدایتکار حسن طارق اور چندا (1962) اور چکوری (1967) فیم ہدایتکار احتشام بھی تھے۔ ان تین بڑے ہدایتکاروں کی محنت کے باوجود یہ ایک ڈیڈ فلاپ فلم تھی جو صرف غزل گائیک استاد غلام علی کے ایک گیت کی وجہ سے یاد رکھی جائے گی جسے صوفی تبسم نے مرزا غالب کے کسی کلام کا پنجابی ترجمہ کیا تھا "میرے شوق دا نئیں اعتبار تینوں۔۔"۔ اس کے بعد انہوں نے اپنے داماد اداکار ندیم کی ذاتی فلم مٹی کے پتلے (1974) بھی بنائی تھی۔ یہ ایک بڑی بامقصد فلم تھی لیکن ناکام رہی تھی۔ احتشام کی آخری فلم بسیرا (1984) تھی جو اصل میں پاکستان اور بنگلہ دیش کی مشترکہ کاوش تھی۔ احتشام کا 2002ء اور مستفیض کا 1992ء میں انتقال ہوا تھا۔

Ehtesham with Nadeem and family
احتشام اور مستفیض کی کل سولہ میں سے سات فلموں میں مسعودرانا نے کل 13 گیت گائے تھے۔ ان کا پہلا ساتھ فلم ساگر (1965) کے اس دلکش گیت سے ہوا تھا "تاروں کی چھیاں چھیاں۔۔" جبکہ سب سے بڑی نغماتی فلم چاند اور چاندنی (1968) تھی جس میں مسعودرانا کا سپر ہٹ گیت "تیری یاد آگئی۔۔" ایک یادگار اور سدابہار گیت تھا۔ فلم قلی (1968) کا یہ گیت بھی کیا لاجواب گیت تھا "قدموں میں تیرے جنت میری ، میں تجھ پر قربان ، اے ماں، پیاری ماں۔۔" مسعودرانا کا مشرقی پاکستان کی فلموں میں جو آخری گیت "بل کھاتی ندیا ، لہروں میں لہرائے۔۔" تھا وہ بھی ان دونوں بھائیوں کی فلم پائل (1970) میں تھا۔ ایسی کوئی معلومات دستیاب نہیں ہیں کہ مسعودرانا نے کوئی بنگالی زبان میں بھی گیت بھی گایا تھا۔ احتشام کی پاکستان میں بنائی گئی فلم مٹی کے پتلے (1974) میں بھی مسعودرانا کے دو رومانٹک دوگانے تھے لیکن اس فلم کا تھیم سانگ اخلاق احمد کی آواز میں تھا "یہ ٹوٹے کھلونے ، یہ مٹی کے پتلے ، یہ بھی تو انسان ہیں۔۔" بڑا زبردست گیت تھا۔ اس گیت نے اخلاق احمد کو اردو فلموں میں مسعودرانا کا متبادل بنا دیا تھا۔

مسعودرانا کے احتشام اور مستفیض کی 7 فلموں میں 13 گیت

(13 اردو گیت ... 0 پنجابی گیت )
1
فلم ... ساگر ... اردو ... (1965) ... گلوکار: آئرن پروین ، مسعود رانا ... موسیقی: عطا الرحمان خان ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ؟
2
فلم ... مالا ... اردو ... (1965) ... گلوکار: آئرن پروین ، مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: عطا الرحمان خان ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ؟
3
فلم ... چاند اور چاندنی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: کریم شہاب الدین ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ندیم
4
فلم ... چاند اور چاندنی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مالا ، مسعود رانا ... موسیقی: کریم شہاب الدین ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: شبانہ ، ندیم
5
فلم ... چاند اور چاندنی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مسعود رانا ، مالا ... موسیقی: کریم شہاب الدین ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ندیم ، شبانہ
6
فلم ... قلی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: احمد رشدی ، مسعود رانا ... موسیقی: علی حسن ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ندیم ، عظیم
7
فلم ... قلی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: علی حسن ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ندیم
8
فلم ... قلی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: علی حسن ... شاعر: سرور بارہ بنکوی ... اداکار: ندیم مع ساتھی
9
فلم ... داغ ... اردو ... (1969) ... گلوکار: مسعود رانا ، آئرن پروین ... موسیقی: روبن گھوش ... شاعر: امین اختر ... اداکار: ندیم ، شبانہ
10
فلم ... داغ ... اردو ... (1969) ... گلوکار: مسعود رانا ، نویتا ... موسیقی: علی حسن ... شاعر: اختر یوسف ... اداکار: سہیل ، کوبیتا
11
فلم ... پائل ... اردو ... (1970) ... گلوکار: مسعود رانا ، سبینہ یاسمین ... موسیقی: کریم شہاب الدین ... شاعر: ؟ ... اداکار: جاوید انیس ، شبانہ
12
فلم ... مٹی کے پتلے ... اردو ... (1974) ... گلوکار: رونا لیلیٰ ، مسعود رانا ... موسیقی: ایم اشرف ... شاعر: ؟ ... اداکار: نشو ، ندیم
13
فلم ... مٹی کے پتلے ... اردو ... (1974) ... گلوکار: مالا ، مسعود رانا ... موسیقی: ایم اشرف ... شاعر: ؟ ... اداکار: نشو ، ندیم

Masood Rana & Ehtesham: Latest Online film

Masood Rana & Ehtesham: Film posters
SagarMalaChand Aur ChandniQulliDaaghMitti Kay Putlay
Masood Rana & Ehtesham:

0 joint Online films

(0 Urdu and 0 Punjabi films)

Masood Rana & Ehtesham:

Total 7 joint films

(5 Urdu, 0 Punjabi films)

1.12-03-1965: Sagar
(Urdu)
2.03-12-1965: Mala
(Bengali/Urdu double version)
3.12-04-1968: Chand Aur Chandni
(Urdu)
4.07-06-1968: Qulli
(Urdu)
5.04-04-1969: Daagh
(Urdu)
6.22-05-1970: Payel
(Double version Bengali/Urdu)
7.22-02-1974: Mitti Kay Putlay
(Urdu)


Masood Rana & Ehtesham: 13 songs in 7 films

(13 Urdu and 0 Punjabi songs)

1.
Urdu film
Sagar
from Friday, 12 March 1965
Singer(s): Irene Parveen, Masood Rana, Music: Khan Ataur Rahman, Poet: , Actor(s): ?
2.
Urdu film
Mala
from Friday, 3 December 1965
Singer(s): Irene Parveen, Masood Rana & Co., Music: Khan Ataur Rahman, Poet: , Actor(s): ?
3.
Urdu film
Chand Aur Chandni
from Friday, 12 April 1968
Singer(s): Masood Rana, Music: Karim Shahabuddin, Poet: , Actor(s): Nadeem
4.
Urdu film
Chand Aur Chandni
from Friday, 12 April 1968
Singer(s): Masood Rana, Mala, Music: Karim Shahabuddin, Poet: , Actor(s): Nadeem, Shabana
5.
Urdu film
Chand Aur Chandni
from Friday, 12 April 1968
Singer(s): Mala, Masood Rana, Music: Karim Shahabuddin, Poet: , Actor(s): Shabana, Nadeem
6.
Urdu film
Qulli
from Friday, 7 June 1968
Singer(s): Ahmad Rushdi, Masood Rana, Music: Ali Hassan, Poet: , Actor(s): Nadeem, Azeem
7.
Urdu film
Qulli
from Friday, 7 June 1968
Singer(s): Masood Rana & Co., Music: Ali Hassan, Poet: , Actor(s): Nadeem & Co.
8.
Urdu film
Qulli
from Friday, 7 June 1968
Singer(s): Masood Rana, Music: Ali Hassan, Poet: , Actor(s): Nadeem
9.
Urdu film
Daagh
from Friday, 4 April 1969
Singer(s): Masood Rana, Irene Parveen, Music: Robin Ghosh, Poet: , Actor(s): Nadeem, Shabana
10.
Urdu film
Daagh
from Friday, 4 April 1969
Singer(s): Masood Rana, Navita Khan, Music: Ali Hassan, Poet: , Actor(s): Sohail, Kobita
11.
Urdu film
Payel
from Friday, 22 May 1970
Singer(s): Masood Rana, Sabina Yasmin, Music: Karim Shahabuddin, Poet: , Actor(s): Javed Anis, Shabana
12.
Urdu film
Mitti Kay Putlay
from Friday, 22 February 1974
Singer(s): Mala, Masood Rana, Music: M. Ashraf, Poet: , Actor(s): Nisho, Nadeem
13.
Urdu film
Mitti Kay Putlay
from Friday, 22 February 1974
Singer(s): Runa Laila, Masood Rana, Music: M. Ashraf, Poet: , Actor(s): Nisho, Nadeem


Pakistan Film Database

Detailed informations on released films, music, artists, history,

box office reports, videos, images etc..



مسعودرانا کے 127 ساتھی فنکاروں پر معلوماتی مضامین


About this site

Pakistan Film Magazine is the first and largest website on Pakistani films, music and artists with detailed informations, videos, images etc. It was launched on May 3, 2000.

Click on the image below and visit the one of the last manual-edited or non-database website from 2012..

Old pages of Pakistan Film Magazine

More archived pages of Pakistan Film Magazine since 2000..