PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Friday, 24 May 2024, Day: 145, Week: 21

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

اتوار 7 اگست 1955

گورنر جنرل سکندر مرزا

سکندر مرزا

7 اگست 1955ء کو میجر جنرل (ر) سکندرمرزا ، پاکستان کے چوتھے اور آخری گورنر جنرل نامزد ہوئے۔۔!

سکندرمرزا ، پاکستان کے وزیرداخلہ ، کشمیر اور کامن ویلتھ کے وزیر تھے جب انھیں تیسرے گورنر جنرل ملک غلام محمد کی بیماری کی وجہ سے قائم مقام گورنر جنرل مقرر کیا گیا تھا لیکن 6 اکتوبر 1955ء سے مکمل اختیارات کے مالک بن گئے تھے۔ اس دوران انھوں نے 11 اگست 1955ء کو وزیراعظم محمدعلی بوگرا کو برطرف کر کے چوہدری محمدعلی کو نیا وزیراعظم مقرر کردیا تھا۔

سکندرمرزا کے گورنرجنرل کے دور کے اہم واقعات

  • 16 ستمبر 1955ء کو پہلی بار کراچی میں ٹیلی ویژن کی نمائش ہوئی تھی۔
  • 23 ستمبر 1955ء کو پاکستان امریکی فوجی معاہدے بغداد پیکٹ یا CENTO میں شامل ہوا تھا۔
  • 30 ستمبر 1955ء کو کراچی کو پہلی بار بلوچستان میں سوئی کے مقام سے گیس کی فراہمی شروع ہوئی تھی۔
  • 14 اکتوبر 1955ء کو مغربی پاکستان کے سبھی صوبے ختم کرکے ایک ون یونٹ بنایا گیا تھا۔
  • 29 فروری 1956ء کو پاکستان کا پہلا آئین منظور ہوا جو 23 مارچ 1956ء سے نافذ ہوا تھا۔ اس آئین کا مسودہ چوہدری محمدعلی نے بنایا تھا۔

سکندرمرزا کون تھے ؟

سکندر مرزا 13نومبر 1899ء کو مرشدآباد ، بنگال میں پیدا ہوئے۔ بتایا جاتا ہے کہ وہ ، میر جعفر کے پڑپوتے تھے جنہوں نے 1757ء میں بنگال کے نواب سراج الدولہ سے غداری کر کے انگریزوں کی بنگال میں فیصلہ کن جیت اور برصغیر پاک و ہند پر قبضے کا راستہ ہموار کیا تھا۔

سکندر مرزا نے الفنسٹن کالج بمبئی میں تعلیم پائی۔ رائل ملٹری کالج سینڈہرسٹ ، برطانیہ سے کامیاب ہو کر 1919ء میں وطن واپس آئے۔ 1921ء میں کوہاٹ کے مقام پر دوسری سکاٹش رائفل رجمنٹ میں شریک ہوئے اور خداداد خیل اور 1924ء میں وزیرستان کی لڑائی میں شریک ہوئے۔ 1922 سے 1924ء تک پونا ہارس رجمنٹ ، جھانسی میں رہے۔ 1926ء میں انڈین پولیٹیکل سروس کے لیے منتخب ہوئے اور ایبٹ آباد ، بنوں ، نوشہرہ اور ٹانک میں بطور اسسٹنٹ کمشنر کام کیا۔ 1931ء سے 1936ء تک ہزارہ اور مردان میں ڈپٹی کمشنر رہے۔ 1938ء میں خیبر میں پولیٹکل ایجنٹ مامور ہوئے۔ انتظامی قابلیت اور قبائلی امور میں تجربے کے باعث 1940ء میں پشاور کے ڈپٹی کمشنر مقرر ہوئے جہاں 1945ء تک رہے۔ پھر ان کا تبادلہ اڑیسہ کر دیا گیا۔ 1942ء میں حکومت ہند کی وزارت دفاع میں جوائنٹ سیکرٹری مقرر ہوئے۔

سکندرمرزا ، قیام پاکستان کے بعد

قیام پاکستان کے بعد سکندر مرزا ، حکومت پاکستان کی وزارت دفاع کے پہلے سیکرٹری نامزد ہوئے۔ مئی 1954 میں مشرقی پاکستان کے گورنر اور پھر وزیر داخلہ بنے۔ ریاستوں اور قبائلی علاقوں کے محکمے بھی ان کے سپرد کیے گئے۔ گورنر جنرل ملک غلام محمد کی خرابی صحت کی بنا پر 7 اگست 1955 کو قائم مقام گورنر جنرل مقرر ہوئے۔ 5 مارچ 1956ء کو اسلامی جمہوریہ پاکستان کے پہلے صدر منتخب ہوئے اور 23 مارچ 1956ء کو اپنے عہدے کا حلف اٹھایا۔ 7 اکتوبر 1958ء کو پہلا ملک گیر مارشل لاء نافذ کیا۔ بیس دن بعد 27 اکتوبر 1958ء کو چیف مارشل لا ایڈمنسٹریڑ فیلڈ مارشل ایوب خان نے انہیں برطرف کرکے جلا وطن کردیا جس کے بعد انہوں نے 1969ء تک اپنی زندگی کے باقی ایام لندن میں گزارے تھے۔



Sikandar Mirza became Governor General

Sunday, 7 August 1955

Sikandar Mirza was last Governor General and first President of Pakistan..




پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.