Menu of Pakistan Film Magazine
Pakistn Film Magazine in Urdu/Punjabi


A Tribute To The Legendary Playback Singer Masood Rana

Masood Rana - مسعود رانا


سہیل رعنا اور مسعود رانا

سہیل رعنا
اپنے لازوال ملی نغموں کی وجہ سے
ہمیشہ یاد رکھیں جائیں گے
Sohail Rana
Sohail Rana
موسیقار سہیل رعنا ، موسیقی کی دنیا کا ایک بڑا قابل احترام نام ہیں۔۔!

وہ ایک فلمی موسیقار ہی نہیں بلکہ ایک ' قومی موسیقار' بھی ہیں جن کے کریڈٹ پر پاکستانی تاریخ کے دو لازوال ملی ترانے ہیں:

  • سوہنی دھرتی ، اللہ رکھے ، قدم قدم آباد تجھے۔۔
  • جیوے جیوے پاکستان ، پاکستان ، پاکستان ، جیوے پاکستان۔۔
یہ کہنا شاید غلط نہ ہو گا کہ قومی ترانے سے بھی زیادہ یہ دونوں ترانے مقبول رہے ہیں۔ یوں تو ان ملی ترانوں کو بہت سے گلوکاروں نے گایا تھا لیکن اصل گیت بنگالی گلوکارہ شہناز بیگم کی آواز میں تھے جنہیں بالترتیب مسرور انور اور جمیل الدین عالی نے لکھا تھا۔ "سوہنی دھرتی اللہ رکھے۔۔" کو مسعود رانا نے میڈم نور جہاں کے ساتھ فلم خوشیا (1973) میں ایک کورس گیت کی شکل میں گایا تھا جس میں ساتھی گلوکار مالا ، تصور خانم ، احمد رشدی ، شوکت علی اور پرویز مہدی تھے۔ وقت کے وزیراعظم جناب ذوالفقار علی بھٹو نے بھی اس ترانے کو ایک عوامی جلسے میں سہیل رعنا اور ان کے ٹی وی گروپ کے ساتھ گایا تھا جو شاید پاکستان کی تاریخ کا ایک منفرد واقعہ ہے۔

Sohail Rana with Zulfikar Ali Bhutto
سہیل رعنا کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ انھوں نے پاکستان ایئر فورس پر بنائی گئی پہلی فلم قسم اس وقت کی (1969) کی موسیقی بھی ترتیب دی تھی۔ اس فلم کی ایک خاص بات یہ تھی کہ انھوں نے اپنا واحد پنجابی گیت اس فلم کے لیے کمپوز کیا تھا "ڈھوک میرے رانجھے والی ، کتنی کو دور اے۔۔" گلوکار سائیں اختر تھے۔ انھوں نے مقدس اسلامی مقامات پر بنائی گئی ایک فلم دیار پیغمبراں (1970) کی پس پردہ موسیقی بھی دی تھی۔ سہیل رعنا صاحب کو پاکستان کی پہلی انگلش فلم Beyond The Last Mountain جس کا اردو ورژن مسافر (1976) کے نام سے ریلیز کیا گیا تھا ، کی موسیقی دینے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

سہیل رعنا کی پہلی فلم جب سے دیکھا ہے تمہیں (1963) تھی جس کا سب سے مقبول گیت "جب سے دیکھا ہے تمہیں ، دل کا عجب عالم ہے۔۔"سلیم رضا کی آواز میں تھا جو درپن پر فلمایا گیا تھا۔ اسی فلم میں انھوں نے ایک کورس گیت "حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے۔۔" کمپوز کیا تھا جس میں پہلی بار ان کا ساتھ مسعود رانا کے ساتھ ہوا تھا۔ اس گیت میں دیگر آوازیں احمد رشدی ، نسیمہ شاہین ، خورشید شیرازی اور ساتھیوں کی تھیں۔ مسعود رانا کے ساتھ سہیل رعنا کی تین فلموں دوراہا (1967) میں "یہ تو کہو ، توڑ کے دل میرا۔۔" ، فلم سوغات (1970) میں "ہوچکا ، ہونا تھا وہ ، اب دل کو کیا سمجھائیں ہم۔۔" اور فلم بادل اور بجلی (1973) میں "دھیرے دھیرے ذرا پاؤں اٹھا۔۔" بڑے خوبصورت گیت تھے۔

مجھے ذاتی طور پر سہیل رعنا کے مجیب عالم سے گوائے گئے دھیمی سروں میں چند گیت بے حد پسند رہے ہیں جنہیں کبھی سنتے سنتے سو جایا کرتا تھا۔ ان میں فلم ماں بیٹا (1969) کا یہ دلکش گیت "تم نے وعدہ کیا تھا آنے کا ، اپنا وعدہ نبھانے آ جاؤ۔۔" ، فلم دل دے کے دیکھو (1969) میں "ذرا تم ہی سوچو ، بچھڑ کے یہ ملنا ، محبت نہیں ہے تو پھر اور کیا ہے۔۔" فلم سوغات (1970) میں "دنیا والو ، تمہاری دنیا میں ، یوں گزاری ہے زندگی ہم نے۔۔" اور "تم سے مل کر میری دنیا ہی بدل جاتی ہے۔۔" اور فلم میرے ہمسفر (1972) میں "اے بےقرار تمنا ، ذرا ٹھہر جاؤ۔۔"

Mujeeb Alam
مجیب عالم (مرحوم) کا ذکر آیا تو اس واقعہ کا ذکر کرنا بھی ضروری ہے کہ جب میری ان سے ایک مختصر سی ملاقات ہوئی تھی۔ یہاں ڈنمارک میں ایک شو ہوا تھا جس میں معین اختر ، زیبا شہناز ، اسمٰعیل تارا اور ملک انوکھا کے علاوہ مجیب عالم بھی تھے۔ میں بھی وہاں موجود تھا اور مجیب عالم کو لائیو سننے کا بڑا شوق تھا لیکن بہت دکھ ہوا تھا جب انھیں ایک بھارتی گیت گاتے ہوئے سنا تھا۔ شو کے بعد ملک انوکھا کی معرفت مجیب عالم سے بات کرنے کا موقع ملا جو بڑی جلدی میں تھے کیونکہ انھیں اگلے شو کے لیے ناروے جانا تھا۔ میں نے سلام کے بعد ان سے عرض کی تھی کہ "بھارتی گیت گانے کی بجائے اپنے گیت کیوں نہیں گاتے جو اتنے اعلیٰ پائے کے ہیں۔۔" میرے اس سوال پر ان کے چہرے پر ناگواری کے تاثرات واضح تھے۔ وہ یہ کہتے ہوئے چل دیے تھے کہ "لوگ جو پسند کرتے ہیں ، ہمیں تو وہی کچھ گانا پڑتا ہے۔۔!" میں کچھ دیر تک شرمندہ کھڑا سوچتا رہ گیا تھا کہ میں نے کون سی غلط بات کہی ہے۔۔؟

سہیل رعنا کی نغمات کے لحاظ سے ارمان (1966) ، دوراہا (1967) ، بازی ، سوغات (1970) ، میرے ہمسفر (1972) اور بادل اور بجلی (1973) بڑی فلمیں تھیں۔ ان کی موسیقی میں خاص خاص فلمی گیتوں کی ایک فہرست کچھ اس طرح سے ہے:

سہیل رعنا نے نوے کے عشرہ میں پاکستان چھوڑ کر کینیڈا میں رہائش اختیار کر لی تھی اور وہاں بھی موسیقی کے شعبہ سے وابستہ ہیں۔ وہ 1938ء میں آگرہ ، بھارت میں پیدا ہوئے تھے۔

مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 6 فلموں میں 7 گیت

7 اردو گیت ... 0 پنجابی گیت
1

حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے ، ان کے نخرے..

فلم ... جب سے دیکھا ہے تمہیں ... اردو ... (1963) ... گلوکار: احمد رشدی ، مسعودرانا ، نسیمہ شاہین ، خورشید شیرازی مع ساتھی ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: اقبال رضوی مع ساتھی
2

یہ زندگی ایک دوراہاہے ، جس میں لوگ ملتے ہیں اور بچھڑ جاتے ہیں..

فلم ... دوراہا ... اردو ... (1967) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: مسرور انور ... اداکار: (پس پردہ)
3

یہ تو کہو ، توڑ کر دل میرا ، چھپ گئے ہو تم کہاں..

فلم ... دوراہا ... اردو ... (1967) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: مسرور انور ... اداکار: وحید مراد
4

شمع خاموش ہو گئی جلتے ، رہ گیا اشک آنکھ سے ڈھلکے..

فلم ... شہنائی ... اردو ... (1968) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: مسرور انور ... اداکار: (پس پردہ ، ریشماں)
5

سر کٹا کے چلو ، خون بہا کے چلو..

فلم ... پھر چاند نکلے گا ... اردو ... (1970) ... گلوکار: مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: انجم کیرانوی ... اداکار: ؟
6

ہو چکا ہونا تھا جو ، اب دل کو کیا سمجھائیں ہم..

فلم ... سوغات ... اردو ... (1970) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: مسرور انور ... اداکار: ندیم
7

دھیرے دھیرے ذرا پاؤں اٹھا ، او تیری پائل کی چھم چھم شور کرے گی..

فلم ... بادل اور بجلی ... اردو ... (1973) ... گلوکار: مسعود رانا ، مالا ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: صہبا اختر ... اداکار: ندیم ، شبنم

مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 7 اردو گیت

1

حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے ، ان کے نخرے ...

(فلم ... جب سے دیکھا ہے تمہیں ... 1963)
2

یہ تو کہو ، توڑ کر دل میرا ، چھپ گئے ہو تم کہاں ...

(فلم ... دوراہا ... 1967)
3

یہ زندگی ایک دوراہاہے ، جس میں لوگ ملتے ہیں اور بچھڑ جاتے ہیں ...

(فلم ... دوراہا ... 1967)
4

شمع خاموش ہو گئی جلتے ، رہ گیا اشک آنکھ سے ڈھلکے ...

(فلم ... شہنائی ... 1968)
5

سر کٹا کے چلو ، خون بہا کے چلو ...

(فلم ... پھر چاند نکلے گا ... 1970)
6

ہو چکا ہونا تھا جو ، اب دل کو کیا سمجھائیں ہم ...

(فلم ... سوغات ... 1970)
7

دھیرے دھیرے ذرا پاؤں اٹھا ، او تیری پائل کی چھم چھم شور کرے گی ...

(فلم ... بادل اور بجلی ... 1973)

مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 0 پنجابی گیت


مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 5سولو گیت

1

یہ تو کہو ، توڑ کر دل میرا ، چھپ گئے ہو تم کہاں ...

(فلم ... دوراہا ... 1967)
2

یہ زندگی ایک دوراہاہے ، جس میں لوگ ملتے ہیں اور بچھڑ جاتے ہیں ...

(فلم ... دوراہا ... 1967)
3

شمع خاموش ہو گئی جلتے ، رہ گیا اشک آنکھ سے ڈھلکے ...

(فلم ... شہنائی ... 1968)
4

سر کٹا کے چلو ، خون بہا کے چلو ...

(فلم ... پھر چاند نکلے گا ... 1970)
5

ہو چکا ہونا تھا جو ، اب دل کو کیا سمجھائیں ہم ...

(فلم ... سوغات ... 1970)

مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 1دو گانے

1

دھیرے دھیرے ذرا پاؤں اٹھا ، او تیری پائل کی چھم چھم شور کرے گی ...

(فلم ... بادل اور بجلی ... 1973)

مسعود رانا اور سہیل رعنا کے 2کورس گیت

1حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے ، ان کے نخرے ... (فلم ... جب سے دیکھا ہے تمہیں ... 1963)
2سر کٹا کے چلو ، خون بہا کے چلو ... (فلم ... پھر چاند نکلے گا ... 1970)

Masood Rana & Sohail Rana: Latest Online film

Doraha

(Urdu - Black & White - Friday, 25 August 1967)


Masood Rana & Sohail Rana: Film posters
Jab Say Dekha Hay TumhenDorahaShehnaiSoughatBaadal Aur Bijli
Masood Rana & Sohail Rana:

1 joint Online films

(1 Urdu and 0 Punjabi films)

1.1967: Doraha
(Urdu)
Masood Rana & Sohail Rana:

Total 6 joint films

(6 Urdu, 0 Punjabi films)

1.1963: Jab Say Dekha Hay Tumhen
(Urdu)
2.1967: Doraha
(Urdu)
3.1968: Shehnai
(Urdu)
4.1970: Phir Chand Niklay Ga
(Urdu)
5.1970: Soughat
(Urdu)
6.1973: Baadal Aur Bijli
(Urdu)


Masood Rana & Sohail Rana: 7 songs in 6 films

(7 Urdu and 0 Punjabi songs)

1.
Urdu film
Jab Say Dekha Hay Tumhen
from Friday, 29 March 1963
Singer(s): Ahmad Rushdi, Masood Rana, Naseema Shaheen, Khursheed Sherazi & Co., Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Iqbal Rizvi & Co.
2.
Urdu film
Doraha
from Friday, 25 August 1967
Singer(s): Masood Rana, Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Waheed Murad
3.
Urdu film
Doraha
from Friday, 25 August 1967
Singer(s): Masood Rana, Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): (Playback)
4.
Urdu film
Shehnai
from Friday, 9 August 1968
Singer(s): Masood Rana, Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): (Playback - Reshma)
5.
Urdu film
Phir Chand Niklay Ga
from Friday, 9 October 1970
Singer(s): Masood Rana & Co., Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Waheed Murad & Co.
6.
Urdu film
Soughat
from Tuesday, 1 December 1970
Singer(s): Masood Rana, Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Nadeem
7.
Urdu film
Baadal Aur Bijli
from Friday, 4 May 1973
Singer(s): Masood Rana, Mala, Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Nadeem, Shabnam

Jalway
Jalway
(2014)
Talash
Talash
(1976)
Eitbar
Eitbar
(2014)
Khatoon
Khatoon
(1955)

Sanjog
Sanjog
(1943)
Farz
Farz
(1947)
Kamli
Kamli
(1946)
Bhai Jan
Bhai Jan
(1945)
Arsi
Arsi
(1947)



پاکستان فلم میگزین ۔۔۔ سنہری فلمی یادوں کا امین

پاکستان فلم میگزین ، پاکستانی فلموں ، فنکاروں ، گیتوں اور اہم فلمی معلومات پر مبنی انٹرنیٹ پر اپنی نوعیت کی اولین ، منفرد اور تاریخ ساز ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔ یہ ایک انفرادی کاوش ہے جو فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ اور پاکستان کی فلمی تاریخ کو مرتب کرنے کا ایک انوکھا مشن بھی ہے۔

A website of Masood Rana

یہ بے مثل ویب سائٹ کبھی نہ بن پاتی اگر پاکستانی فلموں میں میرے آل ٹائم فیورٹ پلے بیک سنگر جناب مسعودرانا صاحب کے گیت نہ ہوتے۔ انھی کے گیتوں کی تلاش میں یہ عظیم الشان ویب سائٹ وجود میں آئی۔ 2020ء سے اس عظیم فنکار کی 25ویں برسی پر ایک ایسا شاندار خراج تحسین پیش کیا جارہا ہے کہ جو آج تک کبھی کسی دوسرے فنکار کو پیش نہیں کیا جا سکا۔ مسعودرانا کے ایک ہزار سے زائد فلمی گیتوں کے اردو/پنجابی ڈیٹابیس کے علاوہ ان کے ساتھی فنکاروں پر بھی بڑے تفصیلی معلوماتی مضامین لکھے جارہے ہیں۔ یہ سلسلہ اپنی تکمیل تک جاری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!

تازہ ترین مضامین




Pakistan Film History

The first and largest website on Pakistani movies, music and artists with chronological film history since 1913, useful information's, facts & figures, milestones, filmo- & songographies, images, videos and Urdu/Punjabi articles on various film topics.



Mr. 303
Mr. 303
(1971)
Suhag
Suhag
(1963)



Artists database

Useful information's with detailed film records, milestones, videos, images etc..


Click on any category from the menu below and read more information's..



PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.