Pakistn Film Magazine in Urdu/Punjabi


A Tribute To The Legendary Playback Singer Masood Rana

Masood Rana - مسعودرانا


حمایت علی شاعر

حمایت علی شاعر
حمایت علی شاعر
نے مشہور زمانہ ترانہ
جاگ اٹھا ہے سارا وطن
بھی لکھا تھا

حمایت علی شاعر ، پاکستان کے ایک ممتاز شاعر ،محقق اور فلمی گیت نگار تھے۔

ان کی پہلی فلم اور بھی غم ہیں (1960) تھی لیکن انھیں شہرت فلم دامن (1963) کے گیت

  • نہ چھڑا سکو گے دامن ، نہ نظر بچا سکو گے۔۔

سے ملی تھی۔ انھوں نے ایک فلم لوری (1966) بھی پروڈیوس کی تھی۔

جاگ اٹھا ہے سارا وطن

مسعودرانا کے ساتھ ان کا پہلا سنگم فلم بنجارن (1962) میں ہوا تھا اور متعدد یادگار گیت تخلیق ہوئے تھے جن میں فلم مجاہد (1965) میں موسیقار خلیل احمد کی دھن پر یہ مقبول ترین فلمی ترانہ بھی تھا:

یہ ایک ناقابل فراموش جنگی ترانہ ہے جس کے بارے میں عینی شاہد بتایا کرتے تھے کہ جب فوجی بھائیوں کی حوصلہ افزائی اور تفریح کےلیے موسیقی کے پروگرام ہوتے تھے تو مسعودرانا سٹیج پر نمودار ہوتے ہی اپنی دلکش اور ولولہ انگیز آواز میں فلک شگاف لمبی تان لگاتے "ساتھیو ، مجاہدو۔۔" تو جوش و خروش کا عالم دیدنی ہوتا تھا اور ان کی ایمان افروز آواز ، جوش عباسؑ ، عزم شبیرؑ اور حیدرؑ کی شمشیر کی طرح دشمن پر لرزہ طاری کرتی ہوئی سنائی دیتی تھی اور سننے والا ہر جری صف شکن اور ہر جواں تیغ زن بن جاتا تھا۔

دور ویرانے میں اک شمع ہے روشن کب سے

فلم نائلہ (1965) بھی اپنے وقت کی ایک بہت بڑی نغماتی اور رومانوی فلم تھی جو گلوکارہ مالا کے فلمی کیرئر کی سب سے بڑی فلم تھی۔ اس فلم میں حمایت علی شاعر کا ایک ہی گیت تھا جو دیگر سبھی گیتوں پر بھاری تھا :

اس دوگانے میں مالا کے ساتھ مردانہ آواز مسعودرانا کی تھی جسے کبھی میں بھی منیر حسین یا سلیم رضا میں سے کسی ایک کی آواز سمجھتا تھا لیکن جب فلمی گیتوں پر تحقیق کی تو بڑی حیرت ہوئی تھی کہ مسعودرانا کتنے بڑے ہر فن مولا گلوکار تھے۔۔!

کوئی ساتھ دے کہ نہ ساتھ دے

فلم بدنام (1966) میں بھی حمایت علی شاعر کا ایک ہی گیت تھا جو فلم کا تھیم سانگ تھا اور جسے مسعودرانا نے گایا تھا "کوئی ساتھ دے کہ نہ ساتھ دے۔۔" اس گیت کا ذکر دیبو بھٹا چاریہ کے مضمون میں تفصیل سے ہو چکا ہے۔

سامنے رشک قمر ہو تو غزل کیوں نہ کہوں

اسی سال کی فلم میرے محبوب کے سبھی گیت حمایت علی شاعر نے لکھےتھے اور موسیقی خلیل احمد کی تھی۔ اس فلم میں ہیرو اور ہیروئن کے مابین گائیکی کا ایک مقابلہ ہوتا ہے جس میں پہلے فلم کی ہیروئن شمیم آراء پر ملکہ ترنم نورجہاں کی آواز میں یہ غزل فلمائی جاتی ہے "ہر قدم پر نت نئے سانچے میں ڈھل جاتے ہیں لوگ۔۔" اس کے مقابلے میں فلمی ہیرو درپن ، مسعودرانا کی یہ دلکش غزل گاتے ہوئے سنائی دیتے ہیں:

مقابلہ موسیقی کے منتظمین کے لیے یہ فیصلہ کرنا مشکل ہو جاتا ہے کہ وہ ان دونوں میں سے کس کی گائیکی کو بہتر قرار دیں۔۔ـ مقابلہ برابر رہتا ہے۔۔!

میڈم نورجہاں نے سب سے زیادہ دوگانے مسعودرانا کے ساتھ گائے تھے اور اس فلم میں گایا ہوا ان کا یہ پہلا دوگانا تھا:

حمایت علی شاعر نے طویل عمر پائی تھی لیکن صرف تین درجن کے قریب فلموں کے نغمات ہی لکھے تھے۔ انھوں نے اپنے فیملی پریشر پر فلمی گیت لکھنے بند کردیے تھے کیونکہ جس نوعیت کے رومانٹک فلمی گیت ہمارے ہاں پسند کیے جاتے ہیں وہ بیشتر مسلم گھرانوں کی روایات و اقدار کے منافی ہوتے ہیں۔


مسعودرانا اور حمایت علی شاعر کے 13 فلمی گیت

13 اردو گیت ... 0 پنجابی گیت
1

پٹ گھونگھٹ کے کھولے کھولے ، تو آجا بابو جی..

فلم ... بنجارن ... اردو ... (1962) ... گلوکار: مسعود رانا ، آئرن پروین مع ساتھی ... موسیقی: دیبو ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: نرالا ، نیلو مع ساتھی
2

حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے ، ان کے نخرے..

فلم ... جب سے دیکھا ہے تمہیں ... اردو ... (1963) ... گلوکار: احمد رشدی ، مسعودرانا ، نسیمہ شاہین ، خورشید شیرازی مع ساتھی ... موسیقی: سہیل رعنا ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: اقبال رضوی مع ساتھی
3

یہ مکھڑے پہ آنچل ، چندا پہ بادل ، یہ قد ہے کہ بجلی سی لہرا رہی ہے..

فلم ... دل نے تجھے مان لیا ... اردو ... (1963) ... گلوکار: بشیر احمد ، مسعود رانا ، نسیمہ شاہین مع ساتھی ... موسیقی: مصلح الدین ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: نرالا مع ساتھی
4

ساتھیو ، مجاہدو ، جاگ اٹھا ہے سارا وطن..

فلم ... مجاہد ... اردو ... (1965) ... گلوکار: مسعود رانا ، شوکت علی ، نور جہاں بیگم ، روشن ، نازش ، عطی مع ساتھی ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: عباس نوشہ ، مینا شوری ، دیبا مع ساتھی
5

دور ویرانے میں اک شمع ہے روشن کب سے ، کوئی پروانہ ادھر آئے تو کچھ بات بنے..

فلم ... نائیلہ ... اردو ... (1965) ... گلوکار: مالا ، مسعود رانا ... موسیقی: ماسٹر عنایت حسین ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: شمیم آرا ، سنتوش
6

یہ دنیا ، کسی کی ہوئی ہے نہ ہوگی ، اسی طرح چپ چاپ آنسو پیے جا..

فلم ... کنیز ... اردو ... (1965) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: (پس پردہ، صبیحہ خانم)
7

دنیا کا یہ دستور ہے ، دنیا سے گلہ کیا ، آئینے کی قسمت میں ہے پتھر کے سوا کیا..

فلم ... تصویر ... اردو ... (1966) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: (پس پردہ، صبیحہ خانم)
8

یہ دنیا ، میت رے ، راہ گذر ہے اور ہم بھی مسافر تم بھی مسافر، کون کسی کا ہووے..

فلم ... بد نام ... اردو ... (1966) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: دیبو ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: علاؤالدین
9

تم سا حسین کوئی نہیں ، کائنات میں ، نازوادا ، شرم و حیا ، بات بات میں..

فلم ... میرے محبوب ... اردو ... (1966) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: درپن
10

سامنے رشک قمر ہو تو غزل کیوں نہ کہوں ، کوئی محبوب نظر ہو تو غزل کیوں نہ کہوں..

فلم ... میرے محبوب ... اردو ... (1966) ... گلوکار: مسعود رانا ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: درپن
11

کلی مسکرائی جو گھونگھٹ اٹھا کے ، خدا کی قسم ،تم بہت یاد آئے..

فلم ... میرے محبوب ... اردو ... (1966) ... گلوکار: مسعود رانا ، نورجہاں ... موسیقی: خلیل احمد ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: درپن ، شمیم آرا
12

لیے چلا ہے دل کہاں ، عجیب ہے یہ سماں ، ایک میں ، ایک تم..

فلم ... الفت ... اردو ... (1967) ... گلوکار: مسعود رانا ، آئرن پروین ... موسیقی: جامی ... شاعر: حمایت علی شاعر ... اداکار: دیبا ، حبیب

مسعودرانا اور حمایت علی شاعر کے 5سولو گیت

1

یہ دنیا ، کسی کی ہوئی ہے نہ ہوگی ، اسی طرح چپ چاپ آنسو پیے جا ...

(فلم ... کنیز ... 1965)
2

دنیا کا یہ دستور ہے ، دنیا سے گلہ کیا ، آئینے کی قسمت میں ہے پتھر کے سوا کیا ...

(فلم ... تصویر ... 1966)
3

یہ دنیا ، میت رے ، راہ گذر ہے اور ہم بھی مسافر تم بھی مسافر، کون کسی کا ہووے ...

(فلم ... بد نام ... 1966)
4

سامنے رشک قمر ہو تو غزل کیوں نہ کہوں ، کوئی محبوب نظر ہو تو غزل کیوں نہ کہوں ...

(فلم ... میرے محبوب ... 1966)
5

تم سا حسین کوئی نہیں ، کائنات میں ، نازوادا ، شرم و حیا ، بات بات میں ...

(فلم ... میرے محبوب ... 1966)

مسعودرانا اور حمایت علی شاعر کے 3دو گانے

1

دور ویرانے میں اک شمع ہے روشن کب سے ، کوئی پروانہ ادھر آئے تو کچھ بات بنے ...

(فلم ... نائیلہ ... 1965)
2

کلی مسکرائی جو گھونگھٹ اٹھا کے ، خدا کی قسم ،تم بہت یاد آئے ...

(فلم ... میرے محبوب ... 1966)
3

لیے چلا ہے دل کہاں ، عجیب ہے یہ سماں ، ایک میں ، ایک تم ...

(فلم ... الفت ... 1967)

مسعودرانا اور حمایت علی شاعر کے 5کورس گیت

1پٹ گھونگھٹ کے کھولے کھولے ، تو آجا بابو جی ... (فلم ... بنجارن ... 1962)
2حسن والوں کا سدا برا انجام ہوتا ہے ، ان کے نخرے ... (فلم ... جب سے دیکھا ہے تمہیں ... 1963)
3یہ مکھڑے پہ آنچل ، چندا پہ بادل ، یہ قد ہے کہ بجلی سی لہرا رہی ہے ... (فلم ... دل نے تجھے مان لیا ... 1963)
4ساتھیو ، مجاہدو ، جاگ اٹھا ہے سارا وطن ... (فلم ... مجاہد ... 1965)

Masood Rana & Himayat Ali Shair: Latest Online film

Ulfat

(Urdu - Black & White - Friday, 17 November 1967)


Masood Rana & Himayat Ali Shair: Film posters
BanjaranJab Say Dekha Hay TumhenDil Nay Tujhay Maan LiyaShararatMujahidNaelaKaneezTasvirBadnamUlfat
Masood Rana & Himayat Ali Shair:

1 joint Online films

(1 Urdu and 0 Punjabi films)

1.1967: Ulfat
(Urdu)
Masood Rana & Himayat Ali Shair:

Total 11 joint films

(11 Urdu, 0 Punjabi films)

1.1962: Banjaran
(Urdu)
2.1963: Jab Say Dekha Hay Tumhen
(Urdu)
3.1963: Dil Nay Tujhay Maan Liya
(Urdu)
4.1963: Shararat
(Urdu)
5.1965: Mujahid
(Urdu)
6.1965: Naela
(Urdu)
7.1965: Kaneez
(Urdu)
8.1966: Tasvir
(Urdu)
9.1966: Badnam
(Urdu)
10.1966: Meray Mehboob
(Urdu)
11.1967: Ulfat
(Urdu)


Masood Rana & Himayat Ali Shair: 12 songs

(12 Urdu and 0 Punjabi songs)

1.
Urdu film
Banjaran
from Friday, 14 September 1962
Singer(s): Masood Rana, Irene Parveen & Co., Music: Deebo, Poet: , Actor(s): Nirala, Neelo & Co.
2.
Urdu film
Jab Say Dekha Hay Tumhen
from Friday, 29 March 1963
Singer(s): Ahmad Rushdi, Masood Rana, Naseema Shaheen, Khursheed Sherazi & Co., Music: Sohail Rana, Poet: , Actor(s): Iqbal Rizvi & Co.
3.
Urdu film
Dil Nay Tujhay Maan Liya
from Friday, 12 April 1963
Singer(s): Bashir Ahmad, Masood Rana, Naseema Shaheen & Co., Music: Muslehuddin, Poet: , Actor(s): Niral & Co.
4.
Urdu film
Mujahid
from Friday, 10 September 1965
Singer(s): Masood Rana, Shoukat Ali, Noorjehan Begum, Roshan, Nazish, Atti & Co., Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): Abbas Nosha, Meena Shori, Deeba & Co.
5.
Urdu film
Naela
from Friday, 29 October 1965
Singer(s): Mala, Masood Rana, Music: Master Inayat Hussain, Poet: , Actor(s): Shamim Ara, Santosh
6.
Urdu film
Kaneez
from Friday, 26 November 1965
Singer(s): Masood Rana, Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): (Playback . Sabiha Khanum)
7.
Urdu film
Tasvir
from Friday, 11 February 1966
Singer(s): Masood Rana, Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): (Playback - Sabiha Khanum)
8.
Urdu film
Badnam
from Friday, 2 September 1966
Singer(s): Masood Rana, Music: Deebo, Poet: , Actor(s): Allauddin
9.
Urdu film
Meray Mehboob
from Friday, 9 September 1966
Singer(s): Masood Rana, Noorjahan, Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): Darpan, Shamim Ara
10.
Urdu film
Meray Mehboob
from Friday, 9 September 1966
Singer(s): Masood Rana, Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): Darpan
11.
Urdu film
Meray Mehboob
from Friday, 9 September 1966
Singer(s): Masood Rana, Music: Khalil Ahmad, Poet: , Actor(s): Darpan
12.
Urdu film
Ulfat
from Friday, 17 November 1967
Singer(s): Masood Rana, Irene Parveen, Music: Jami, Poet: , Actor(s): Deeba, Habib


Maha Maya
Maha Maya
(1936)
Aurat
Aurat
(1940)
Roti
Roti
(1942)



پاکستان کی 75 سالہ فلمی تاریخ

پاکستان فلم میگزین ، سال رواں یعنی 2023ء میں پاکستانی فلموں کے 75ویں سال میں مختلف فلمی موضوعات پر اردو/پنجابی میں تفصیلی مضامین پیش کر رہا ہے جن میں مکمل فلمی تاریخ کو آن لائن محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

قبل ازیں ، 2005ء میں پاکستانی فلموں کا عروج و زوال کے عنوان سے ایک معلوماتی مضمون لکھا گیا تھا۔ 2008ء میں پاکستانی فلموں کے ساٹھ سال کے عنوان سے مختلف فنکاروں اور فلموں پر مختصر مگر جامع مضامین سپردقلم کیے گئے تھے۔ ان کے علاوہ پاکستانی فلموں کے منفرد ڈیٹابیس سے اعدادوشمار پر مشتمل بہت سے صفحات ترتیب دیے گئے تھے جن میں خاص طور پر پاکستانی فلموں کی سات دھائیوں کے اعدادوشمار پر مشتمل ایک تفصیلی سلسلہ بھی موجود ہے۔


237 فنکاروں پر معلوماتی مضامین



PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.