A Tribute To The Legendary Playback Singer Masood Rana

Masood Rana - مسعودرانا Masood Rana sang 1036 songs in 646 films

مسعودرانا اور سائیں اختر

گزشتہ سال پاکستان کے عظیم فلمی گلوکار مسعودرانا کی پچیسویں برسی پر خراج تحسین کا جو منفرد سلسلہ شروع کیا تھا ، وہ اتنی طوالت اختیار کر جائے گا ، یہ اندازہ بالکل نہیں تھا۔ ارادہ تھا کہ اردو میں مسعودرانا کے ایک ہزار سے زائد فلمی گیتوں کے ڈیٹابیس سے مختلف النوع فہرستیں بنا کر کام مکمل کر لوں گا لیکن اس دوران خیال آیا کہ اگر دیگر ساتھی فنکاروں کے بارے میں بھی لگے ہاتھ کام ہوجائے تو اردو میں بھی پاکستانی فلموں اور فنکاروں کے بارے میں ریکارڈ محفوظ ہو جائے گا۔ شروع میں توقع تھی کہ اگر ہر ہفتے ایک مضمون لکھتا تو پچاس کے قریب مضامین تو لکھ ہی لوں گا لیکن توقعات سے بڑھ کر یہ تعداد دگنی ہو گئی تھی اور پورے سو مضامین لکھنے میں کامیاب ہو گیا تھا۔ یہ سلسلہ ابھی نامکمل ہے اور ان شاء اللہ ، مکمل ہونے تک جاری رہے گا۔

یہ سب کبھی ممکن نہ ہوتا اگر کرونا وائرس کی عالمی وبا نہ پھیلتی اور اس کے نتیجے میں مدت بعد فرصت کے جو لمحات میسر آئے ، وہ میرے لئے کسی نعمت غیر مترقبہ سے کم نہیں تھے۔ یہاں ڈنمارک میں 9 مارچ 2020ء سے لاک ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے جو ابھی تک ختم ہونے میں نہیں آ رہا۔ اور تو اور ، 4 جنوری 2021ء سے کرونا کی وبا میرے گھر تک بھی پہنچ گئی ہے۔ اب تک دو دنوں سے اتنا شدید بخار رہا کہ بیشتر وقت بے سدھ پڑا رہا۔ اب اگلے دو ہفتے تک گھر سے باہر نکلنے اور کسی سے ملنے جلنے کی اجازت نہیں ہے ، اور نہ کسی غیر کو ہمارے ہاں آنے کی اجازت ہے۔ اس وقت ہم تین متاثرہ افراد قرنطینہ میں پڑے ہوئے ہیں اور اپنے ہی گھر میں کسی اچھوت کا سا سلوک ہو رہا ہے۔۔!

اس نئے سال میں اب اس سلسلے کو وہاں سے شروع کرتے ہیں جہاں پچھلے سال ختم ہوا تھا۔ مسعودرانا کے انتہائی قابل رشک فلمی کیرئر میں ہم 1966ء کی فلم معجزہ تک پہنچے تھے جس میں انہوں نے پہلی اور آخری بار ایک اور عظیم گلوکار سلیم رضا کے ساتھ تین گیت گائے تھے۔ ان میں سے ایک قوالی تھی "داتا میرے ، جھولی بھر دے ، میں سوالی تیرے در کا۔۔" اس قوالی میں تیسری نمایاں آواز سائیں اختر کی تھی اور یہ قوالی فلم میں بھی انہی پر فلمائی گئی تھی۔ وہ ایک لوک اور صوفی گلوکار تھے جو مختلف مزاروں ، درباروں اور خانقاہوں وغیرہ پر عرس اور میلے ٹھیلوں کے موقع پر عارفانہ کلام گایا کرتے تھے۔ وہ فلموں اور فلمی گیتوں میں مختلف دھمالوں اور قوالوں کے درمیان نظر آتے تھے اور اپنے الاپ اور لمبی تانوں کی وجہ سے مشہور تھے۔

سائیں اختر کی پہلی فلم حاتم (1956) تھی جس میں انہوں نے سلیم رضا اور ساتھیوں کے ساتھ ایک کورس گیت گایا تھا "رہے اونچا تیرا نام ، سخی رے۔۔" فلم اولاد (1962) کی مشہور زمانہ قوالی "حق لا الہ الا اللہ ، فرما دیا کملی والے ﷺ نے۔۔" میں بھی ان کی آواز شامل تھی۔ فلم توبہ (1964) کی ایک اور قوالی "نہ ملتا ، گر یہ توبہ کا سہارا ، ہم کہاں جاتے۔۔" میں بھی انہوں نے سلیم رضا اور منیر حسین کا ساتھ دیا تھا۔ لیکن انہیں اصل شہرت فلم عشق پر زور نہیں (1963) کے اس گیت سے ملی تھی "دل دیتا ہے رو رو دہائی ، کسی سے کوئی پیار نہ کرے۔۔" مالا کے گائے ہوئے اس سپرہٹ گیت میں موسیقار ماسٹر عنایت حسین نے سائیں اختر کا الاپ اتنی خوبصورتی سے پیش کیا کہ وہ ایک شاہکار گیت بن گیا تھا۔ اس کے علاوہ احمدرشدی ، مسعودرانا اور ساتھیوں کے ساتھ گائے ہوئے فلم سمندر (1968) کے اس کورس گیت "ساتھی ، تیرا میرا ساتھی ہے ، لہراتا سمندر۔۔" میں بھی ان کی آواز نمایاں تھی جبکہ فلم وریام (1969) میں مسعودرانا اور منیر حسین کے ساتھ یہ دھمال "لال میری پت رکھیوبلا ، جھولے لالن۔۔" کے علاوہ انہی بولوں کو جب قوالی کے انداز میں فلم میں اکیلا (1972) میں مسعودرانا اور عنایت حسین بھٹی کی آوازوں میں موسیقار بخشی وزیر صاحبان نے ریکارڈ کیا تھا تو اس میں بھی سائیں اختر کی آواز شامل تھی۔

سائیں اختر نے سولو گیت بہت کم گائے ہیں جس کی وجہ یہ تھی کہ وہ ایک مخصوص آواز کے مالک تھے جو فلمی گائیکی کے لئے موضوع نہیں تھی۔ ان کی آواز ایک کھلے گلے اور اونچی سروں میں گانے والے معاون گلوکار کے طور پر زیادہ تر الاپ اور لمبی تانوں کے لئے فلمی گیتوں ، دھمالوں اور قوالیوں میں شامل کی جاتی تھی۔ فلم زمین (1965) میں ان کی لیڈنگ آواز میں ایک دھمال تھی "تیری شان ، شان قلندری ، تو بڑا غریب نواز ہے ، اللہ ہو۔۔" فلم قسم اس وقت کی (1969) میں موسیقار سہیل رعنا نے اپنا واحد پنجابی یا سرائیکی گیت "ڈھوک میرے رانجھے والی ، کتنی کو دور اے۔۔" ، سائیں اختر ہی سے گوایا تھا۔ اس کے علاوہ ساٹھ کے عشرہ میں پنجابی فلموں کی ایک بہت بڑی اور کامیاب فلم کمپنی لولی پکچرز کا ٹائٹل سانگ بھی سائیں اختر کی آواز میں ہوتا تھا۔

سائیں اختر ، بطور اداکار بھی متعدد فلموں میں نظر آئے تھے جن میں ان پر قوالیاں اور کورس گیت فلمائے گئے تھے لیکن نصف صدی بعد ریلیز ہونے والی فلم سجرا پیار (2016) میں ان پر مسعودرانا کا یہ سولو گیت فلمایا گیا تھا "مٹی دیا باویا ، گھڑی دا اے میلہ ، ایتھے دل کاہنوں لا لیا۔۔" ریلیز کے اعتبار سے یہی ان کی آخری فلم ہے۔

سائیں اختر حسین کی آواز اور سٹائل گلوکارہ ریشماں سے ملتا جلتا تھا اور ان کے غیر فلمی گیتوں میں سے ایک "دل والا روگ نئیں کسے نوں سنائی دا ، اپنی سوچاں وچ آپ مر جائی دا۔۔" بڑا مقبول گیت تھا۔ وہ 1920ء میں امرتسر میں پیدا ہوئے تھے اور 1987ء میں انتقال ہوا تھا۔

مسعودرانا اور سائیں اختر کے 7 فلمی گیت

4 اردو گیت ... 2 پنجابی گیت
1
فلم ... معجزہ ... اردو ... (1966) ... گلوکار: سلیم رضا ، مسعود رانا ،؟ ، سائیں اختر مع ساتھی ... موسیقی: اختر حسین اکھیاں ... شاعر: ساحل فارانی ... اداکار: سائیں اختر مع ساتھی
2
فلم ... سمندر ... اردو ... (1968) ... گلوکار: احمد رشدی ، مسعود رانا ، سائیں اختر مع ساتھی ... موسیقی: دیبو ... شاعر: صہبا اختر ... اداکار: وحید مراد، حنیف مع ساتھی
3
فلم ... وریام ... پنجابی ... (1969) ... گلوکار: سائیں اختر ، منیر حسین ، مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: غلام حسین ، شبیر ... شاعر: ؟ ... اداکار: (پس پردہ ، ٹائٹل سانگ )
4
فلم ... گیت کہاں سنگیت کہاں ... اردو ... (1969) ... گلوکار: منیر حسین ، حامد علی بیلا ، پرویز اختر ، سائیں اختر ، مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: ماسٹر طفیل ... شاعر: ساحل فارانی ... اداکار: ؟ ،؟ ، امداد حسین ، محمد علی مع ساتھی
5
فلم ... جوڑ جواناں دا ... پنجابی ... (1971) ... گلوکار: مسعود رانا ، سائیں اختر مع ساتھی ... موسیقی: طفیل فاروقی ... شاعر: ؟ ... اداکار: چوہان ، گلریز مع ساتھی
6
فلم ... میں اکیلا ... اردو ... (1972) ... گلوکار: سائیں اختر ، عنایت حسین بھٹی ، مسعود رانا مع ساتھی ... موسیقی: بخشی وزیر ... شاعر: ؟ ... اداکار: بخشی وزیر مع ساتھی
7
فلم ... آخری قربانی ... عربی ... (1981) ... گلوکار: مسعودرانا ، سائیں اختر مع ساتھی ... موسیقی: ملک صدیق ... شاعر: ؟ ... اداکار: (پس پردہ)

مسعودرانا اور سائیں اختر کے 4 اردو گیت

1داتا میرے ، جھولی بھر دے ، میں سوالی تیرے در کا ... (فلم ... معجزہ ... 1966)
2ساتھی ، تیرا میرا ساتھی ہے لہراتا سمندر ، ہم بیٹے ہیں سمندر کے ... (فلم ... سمندر ... 1968)
3پڑھ لاالہ الا اللہ ، محمد پاک رسول اللہ ﷺ ... (فلم ... گیت کہاں سنگیت کہاں ... 1969)
4لال میری پت رکھیو بلا جھولے لالن ... (فلم ... میں اکیلا ... 1972)

مسعودرانا اور سائیں اختر کے 2 پنجابی گیت

1لال میری پت رکھیو بلا جھولے لالن ... (فلم ... وریام ... 1969)
2اللہ ہو حق اے ،سچے باہو حق اے ، الف اللہ ، چنبے دی بوٹی ... (فلم ... جوڑ جواناں دا ... 1971)

Masood Rana & Sain Akhtar: Latest Online film

Veryam

(Punjabi - Black & White - Friday, 16 May 1969)


Masood Rana & Sain Akhtar: Film posters
MoajzaSamundarSharik-e-HayyatVeryamGeet Kahin Sangeet KahinAakhri Qurbani
Masood Rana & Sain Akhtar:

2 joint Online films

(0 Urdu and 2 Punjabi films)

1.1969: Veryam
(Punjabi)
2.1981: Aakhri Qurbani
(Punjabi)
Masood Rana & Sain Akhtar:

Total 7 joint films

(3 Urdu, 3 Punjabi, 0 Pashto, 0 Sindhi films)

1.1966: Moajza
(Urdu)
2.1968: Samundar
(Urdu)
3.1968: Sharik-e-Hayyat
(Urdu)
4.1969: Veryam
(Punjabi)
5.1969: Geet Kahin Sangeet Kahin
(Urdu/Bengali double version)
6.1971: Jor Jawana Da
(Punjabi)
7.1981: Aakhri Qurbani
(Punjabi)


Masood Rana & Sain Akhtar: 7 songs

(4 Urdu and 2 Punjabi songs)

1.
Urdu film
Moajza
from Friday, 25 February 1966
Singer(s): Saleem Raza, Masood Rana, ?, Sain Akhtar & Co., Music: Akhtar Hussain Akhian, Poet: Sahil Farani, Actor(s): Sain Akhtar & Co.
2.
Urdu film
Samundar
from Sunday, 10 March 1968
Singer(s): Ahmad Rushdi, Masood Rana, Sain Akhtar & Co., Music: Deebo, Poet: Sehba Akhtar, Actor(s): Waheed Murad, Hanif & Co.
3.
Punjabi film
Veryam
from Friday, 16 May 1969
Singer(s): Sain Akhtar, Munir Hussain, Masood Rana & Co., Music: Ghulam Hussain, Shabbir, Poet: Iftikhar Shahid, Actor(s): (Playback - Title song)
4.
Urdu film
Geet Kahin Sangeet Kahin
from Friday, 26 September 1969
Singer(s): Munir Hussain, Hamid Ali Bela, Parvez Akhtar, Sain Akhtar, Masood Rana & Co., Music: Master Tufail, Poet: Sahil Farani, Actor(s): ?, ?, Imdad Hussain, Mohammad Ali & Co.
5.
Punjabi film
Jor Jawana Da
from Friday, 12 March 1971
Singer(s): Masood Rana, Sain Akhtar & Co., Music: Tufail Farooqi, Poet: ?, Actor(s): ?, Gulrez & Co.
6.
Urdu film
Main Akela
from Friday, 23 June 1972
Singer(s): Sain Akhtar, Inayat Hussain Bhatti, Masood Rana & Co., Music: Bakhshi Wazir, Poet: ?, Actor(s): Bakhshi Wazir & Co.
7.
Arabic film
Aakhri Qurbani
from Friday, 4 September 1981
Singer(s): Masood Rana, Sain Akhtar & Co., Music: Malik Siddiq, Poet: (99 God names), Actor(s): (Playback)


Pakistan Film Magazine

The first and largest website on Pakistani films, music and artists.



پاکستان فلم میگزین ۔۔۔ سنہری فلمی یادوں کا امین

پاکستان فلم میگزین ، پاکستانی فلموں ، فلمی گیتوں اور فلمی فنکاروں پر اولین ، منفرد اور ایک بے مثل معلوماتی اور تفریحی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔ یہ ایک انفرادی کاوش ہے جو فارغ اوقات کا ایک بہترین مشغلہ بھی ہے۔ یہ تاریخ ساز ویب سائٹ کبھی نہ بن پاتی ، اگر پاکستانی فلموں میں میرے آئیڈیل گلوکار جناب مسعودرانا صاحب کے گیت نہ ہوتے۔ اس عظیم گلوکار کو ایک منفرد خراج تحسین پیش کرنے کے لئے اس کے گائے ہوئے ایک ہزار سے زائد گیتوں کا پہلا اردو ڈیٹابیس بنایا گیا ہے جس میں ریکارڈ محفوظ رکھنے کے علاوہ دیگر ساتھی فنکاروں پر تفصیلی مضامین بھی شائع کئے جارہے ہیں۔