Pakistn Film Magazine in Urdu/Punjabi


Film Actress

Rakhshi

A famous dancer actress..
Rakhshi - Film Actress - A famous dancer actress..
Facts on Rakhshi
Real name Parveen
First film Jallan (Urdu - 1955)
Active career
Life -
Born at
Language
Profession Acting, designing
Relations
Rakhshi was first top dancer actress in Pakistani films. Her first firm was Director in 1951 and last film was Bahadur in 1967. She is living in Lahore as a fasion designer..

مجرا گیتوں میں پہلا بڑا اور مشہور نام اداکارہ رخشی کا تھا جس نے چالیس سے زائد فلموں میں آئٹم نمبرز کیے تھے۔ فلم ڈائریکٹر (1951) سے فلمی کیرئر کا آغاز کرنے والی یہ پرکشش اداکارہ ، پچاس کے عشرہ کی مقبول ترین ڈانسر تھی۔ فلم دلابھٹی (1956) میں رخشی پر فلمایا ہوا گلوکارہ منورسلطانہ کا یہ گیت بڑا مشہور ہوا تھا "پیار کر لے ، آجا پیار کر لے ، پیسے نئیں جے کول تے ادھار کر لے۔۔" فلم نوراں (1957) میں اقبال بانو کا یہ گیت "چھیتی بوہڑی وے طبیبا ، نئیں تے میں مر گیا آ۔۔" بھی رخشی پر فلمایا گیا تھا۔ فلم سلمیٰ (1960) میں زبیدہ خانم اور منیرحسین کے اس شوخ گیت پر رخشی کا رقص قابل دید تھا "مت چھونا رے ، میرا بدن دہکتی آگ ، مجھے مت چھونا رے۔۔" مسعودرانا نے جہاں فلمی گائیکی پر گہرے اثرات مرتب کیے تھے وہاں بیشتر آئٹم گرلز کے لیے گیت بھی گائے تھے لیکن رخشی کے ساتھ واحد مشترکہ فلم بہادر (1967) تھی اور کوئی مشترکہ گیت نہیں ملتا۔ رخشی کا تعلق کرسچن برادری سے تھا۔




Pakistan Movie Database

Detailed Pakistan film history in chronological order since 1913..



Suhag
Suhag
(1963)
Wohti Jee
Wohti Jee
(1982)
Masoom
Masoom
(1957)

Khazanchi
Khazanchi
(1941)
Hamjoli
Hamjoli
(1946)
Alam Ara
Alam Ara
(1931)
Patwari
Patwari
(1942)

Panchhi
Panchhi
(1944)
Chaudhry
Chaudhry
(1941)
Ragni
Ragni
(1945)
Director
Director
(1947)



پاکستان فلم میگزین ، سنہری فلمی یادوں کا امین

پاکستان فلم میگزین ، اپنی نوعیت کی اولین ، منفرد اور تاریخ ساز ویب سائٹ ہے جس پر ہزاروں پاکستانی فلموں ، فنکاروں اور گیتوں کی معلومات ، واقعات اور اعدادوشمار دستیاب ہیں۔ یہ ایک انفرادی کاوش ہے جو فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ اور پاکستان کی فلمی تاریخ کو مرتب کرنے کا ایک انوکھا مشن بھی ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل جاری و ساری ہے۔

مسعود رانا پر ایک معلومات ویب سائٹ

یہ بے مثل ویب سائٹ کبھی نہ بن پاتی اگر پاکستانی فلموں میں میرے آل ٹائم فیورٹ پلے بیک سنگر جناب مسعودرانا صاحب کے گیت نہ ہوتے۔ اس عظیم گلوکار کے گیتوں کی تلاش و جستجو میں یہ سب تگ و دو کی جو گزشتہ دو دھائیوں سے پاکستانی فلمی معلومات کا سب سے بڑا آن لائن منبع ثابت ہوئی۔

2020ء سے مسعود رانا کی 25ویں برسی پر ایک ایسا شاندار خراج تحسین پیش کیا جارہا ہے کہ جو آج تک کسی دوسرے فنکار کو پیش نہیں کیا جا سکا۔ مسعودرانا کے ایک ہزار سے زائد فلمی گیتوں اور ساڑھے چھ سو فلموں کے اردو/پنجابی ڈیٹابیس کے علاوہ دیگر پاکستانی فنکاروں پر بھی بڑے تفصیلی معلوماتی مضامین لکھے جارہے ہیں۔

یہ سلسلہ اپنی تکمیل تک جاری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.