PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Sunday, 21 July 2024, Day: 203, Week: 29

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

جمعتہ المبارک 15 اگست 1947

قائد اعظم محمد علی جناحؒ


قائدِاعظمؒ
اگر گورنر جنرل نہ بنتے تو بہتر ہوتا؟

قائد اعظمؒ نے 15 اگست 1947ء کو پاکستان کے پہلے گورنر جنرل کے عہدہ کا حلف اٹھایا تھا۔۔!

بانی پاکستان حضرت قائد اعظمؒ محمد علی جناح ، تاریخ عالم کی ایک منفرد ہستی تھے کہ جنہوں نے ایک گولی چلائے بغیر اور ایک قطرہ خون بہائے بغیر دنیا کی سب سے بڑی اسلامی مملکت اورایک نئی قوم تشکیل دی تھی۔

قیام پاکستان کے بعد پاکستان کے پہلے گورنر جنرل منتخب ہوئے۔ یہ عہدہ اصل میں برطانوی پارلیمنٹ نے The Indian Independence Act 1947 کے تحت تشکیل دیا گیا تھا جس کی رو سے برطانوی ہند کو پاکستان اور بھارت کو دو آزاد نوآبادیات کا درجہ دیا گیا تھا۔ گورنر جنرل تاجدار برطانیہ کا نمائند ہ ہوتا تھا جسے رسمی منظوری سے متعلقہ ممالک کی خود مختار دستور ساز اسمبلیاں منتخب کر تی تھیں۔

کیا قائداعظمؒ کو گورنرجنرل بننا چاہیے تھا؟

قائد اعظمؒ ، گورنرجنرل کا عہدہ قبول نہ کرتے تو شاید زیادہ بہتر ہوتا کیونکہ ایک تو یہ منصب ان کے اس مقام کے شایان شان نہیں تھا جو تاریخ نے انہیں "بانی پاکستان" کے طور پر عطا کیا تھا۔ دوسرا گورنر جنرل ، تاجدار برطانیہ کا نمائندہ تھا جسے وہ تمام اختیارات تو حاصل تھے جو کسی مطلق العنان حکمران کو حاصل ہوتے ہیں لیکن اس کے لئے تاجدار برطانیہ کی رسمی منظوری بھی درکار ہوتی تھی۔

قائد اعظمؒ کے گورنر جنرل کے طور پر چند اقدامات ایسے ہیں جو نوزائیدہ مملکتِ پاکستان کے لیے خوش آئند نہیں تھے۔ ان میں مندرجہ ذیل واقعات کے دورس اور منفی نتائج سامنے آئے:

قائداعظمؒ کی ذاتی زندگی

قائد اعظمؒ، 25 دسمبر 1876ء کو کراچی میں پیدا ہوئے جہاں سے انہوں نے ابتدائی تعلیم بھی حاصل کی۔ 1896ء میں انگلینڈ سے بار ایٹ لاء کیا اور وطن واپسی پر وکالت کے پیشے سے منسلک ہوگئے۔ 1909ء میں مجلس قانون ساز کے رکن منتخب ہوئے اور 1913ء سے 1937ء تک بیک وقت کانگریس اور مسلم لیگ کے رکن رہے۔

قائد اعظمؒ، ہندو مسلم اتحاد کے بڑے سرگرم حامی تھے لیکن ہندو لیڈروں کے متعصبانہ رویے سے نالاں ہو کر 1937ء میں کانگریس کو ہمیشہ کے لئے خیرآباد کہہ کر آل انڈیا مسلم لیگ کے تاحیات صدر منتخب ہوگئے تھے۔ 1940ء میں ان کی قیادت میں لاہور میں"قرارداد پاکستان" منظور ہوئی اور 14 اگست 1947ء کو وہ، دنیا کی سب سے بڑی اسلامی ریاست کے بانی کے طور پر تاریخ میں امر ہو گئے تھے۔






Qaid-e-Azam as Governor General of Pakistan

Friday, 15 August 1947

The founder of Pakistan, Qaid-e-Azam Mohammad Ali Jinnah became the first Governor General of Pakistan on August 15, 1947..




پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.