PAK Magazine
Sunday, 03 July 2022, Week: 26

Pakistan Chronological History
Annual
Annual
Monthly
Monthly
Weekly
Weekly
Daily
Daily
Alphabetically
Alphabetically


1948

General Douglas Gracey

Wednesday, 11 February 1948

جنرل ڈگلس گریسی

بدھ 11 فروری 1948
جنرل ڈگلس گریسی
جنرل ڈگلس گریسی

جنرل سر ڈگلس گریسی ، پاک آرمی کے دوسرے اور آخری انگریز چیف تھے جنھوں نے 11 فروری 1948ء سے 16 جنوری 1951ء تک اپنی مدت ملازمت پور ی کی تھی۔

جنرل گریسی نے قائداعظمؒ کی حکم عدولی کی

جنرل گریسی ، پاکستان کے پہلے ڈپٹی کمانڈر انچیف بھی رہے۔ انہوں نے 27 اکتوبر 1947ء کو ریاست کشمیر میں بھارتی فوجی مداخلت روکنے کے لئے پاک فوج کو کاروائی کرنے کا قائد اعظم ؒ کا حکم نظر انداز کر دیا تھا اوراس کی شکایت پاک بھارت افواج کے مشترکہ سپریم کمانڈر فیلڈ مارشل …… کلاؤڈ آؤکن لیک (Claude Auchinleck) کو دہلی میں دے دی تھی جنھوں نے قائد اعظم ؒ کو دھمکی دی تھی کہ اگر جنگ ہوئی تو تمام انگریز افسران مستعفی ہوجائیں گے۔ اس پر قائداعظمؒ نے اپنا فیصلہ واپس لے لیا تھا۔

جنرل گریسی کے دورکا سب سے اہم ترین واقعہ یکم جنوری 1949ء کو اقوام متحدہ کی مداخلت سے جنگ بندی کا قیام تھا اور نتیجہ وادی کشمیر ، جموں اور لداخ پر بھارتی قبضہ تھا جبکہ آزاد کشمیر اور شمالی علاقہ جات ، پاکستان کے حصے میں آئے تھے۔

جنرل گریسی کون تھے؟

جنرل سر ڈگلس ڈیوڈ گریسی ، 3 ستمبر 1894ء کو خیبر پختونخواہ میں پیدا ہوئے اور 5 جون 1964ء کو 69 سال کی عمر میں میں انگلینڈ میں انتقال کر گئے تھے۔ انھوں نے بلنڈیل اسکول اور رائل ملٹری کالج ، سینڈہرسٹ میں تعلیم حاصل کی۔ 1914ء میں سیکنڈ لیفٹیننٹ کے طور پر انڈین آرمی میں شامل ہوئے۔ 1915ء میں ہندوستانی فوج میں سیکنڈ لیفٹیننٹ کے طور پر مشرق وسطیٰ میں تعینات ہوئے۔ 1917 میں ملٹری کراس ملا۔ 1925 میں رائل ملٹری کالج سینڈہرسٹ میں انسٹرکٹر بنے۔ 1928ء سے 1929ء تک اسٹاف کالج کوئٹہ میں تعلیم حاصل کی۔ 1941ء میں بریگیڈیئر کے عہدے پر ترقی ملی۔ 1942ء میں میجر جنرل بنے اور برما میں خدمات انجام دیں۔ دوسری جنگ عظیم میں انھوں نے ستمبر 1945ء میں 20ویں ہندوستانی ڈویژن کے بیس ہزار فوجیوں کی قیادت میں ویت نام کے شہر سائگون پر قبضہ کیا۔ مئی 1946ء میں قائم مقام لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دی گئی۔ 1947ء کے اواخر میں جب برٹش انڈیا کی تقسیم ہوئی تو گریسی 1948ء میں پاکستان آرمی کے کمانڈر انچیف کے طور پر فرینک میسروی کی جگہ لینے سے پہلے چیف آف دی جنرل اسٹاف اور پاکستانی فوج کے ڈپٹی کمانڈر انچیف بن گئے۔












World history
Latest News on PAK Magazine
Pakistan Media

PAK Magazine presents latest news from newspapers, TV, social media, political parties, official's and many renowned journalists from Pakistan and around the world.


تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر اہم تاریخی واقعات کو بتاریخ سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ ترتیب سے چند کلکس کے نیچے پیش کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں اہم ترین واقعات اور شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مخصوص صفحات ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!



1957
چندریگر ، وزیر اعظم بنے
چندریگر ، وزیر اعظم بنے
1951
پاکستان آرڈیننس فیکٹری
پاکستان آرڈیننس فیکٹری
1951
آدم جی جوٹ ملز
آدم جی جوٹ ملز
1946
قرارداد دہلی
قرارداد دہلی
1958
جنرل ایوب خان کی پہلی کابینہ
جنرل ایوب خان کی پہلی کابینہ


تاریخ پاکستان ، اہم موضوعات

تحریک پاکستان
تحریک پاکستان
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
شہ سرخیاں
شہ سرخیاں
سیاسی ڈائری
سیاسی ڈائری
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
بے نظیر بھٹو
بے نظیر بھٹو
نواز شریف
نواز شریف
عمران خان
عمران خان
سکندرمرزا
سکندرمرزا
جنرل ایوب
جنرل ایوب
جنرل یحییٰ
جنرل یحییٰ
جنرل ضیاع
جنرل ضیاع
جنرل مشرف
جنرل مشرف
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
انتخابات
انتخابات
امریکی امداد
امریکی امداد
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

چند اہم بیرونی لنکس


Pakistan Exchange Rates

Pakistan Rupee Exchange Rate



PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.