PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Sunday, 23 June 2024, Day: 175, Week: 25

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

جمعتہ المبارک 22 اگست 1947

سرحد حکومت کی برطرفی

قائدِاعظمؒ اور ڈاکٹر خان صاحب
پاکستان کے قیام کے
صرف ایک ہفتہ بعد ہی
سرحد حکومت برطرف کر دی گئی

پاکستان کے قیام کے دوسرے ہی ہفتے یعنی 22 اگست 1947ء کو صوبہ سرحد (خیبر پختون خواہ) کی منتخب حکومت کو برطرف کردیا گیا تھا۔۔!

جمہوری عمل سے بننے والے پاکستان کی تاریخ میں یہ پہلا غیر جمہوری قدم کسی اور نے نہیں ، خود بانی پاکستان حضرت قائداعظمؒ نے اٹھایا تھا جب انہوں نے گورنر جنرل کے اختیارات استعمال کرتے ہوئے صوبہ سرحد (خیبر پختونخواہ) کی منتخب کانگریسی حکومت کو برطرف کر دیا تھا۔ 1945/46ء کے انتخابات میں یہ واحد مسلم صوبہ تھا جہاں سے مسلم لیگ کو شکست ہوئی تھی اور اسے 50 میں سے صرف 17 سیٹیں ملی تھیں۔ 30 سیٹوں کے ساتھ کانگریس سب سے بڑی پارٹی تھی ، دو سیٹیں جمیعت العلمائے ہند اور ایک سیٹ سکھ جماعت اکالی دل کی تھی۔

صوبہ سرحد میں کانگریسی حکومت کیوں برطرف کی گئی تھی؟

3 جون 1947ء کو جب تقسیم ہند کا اعلان ہوا تو اس میں یہ شرط رکھی گئی تھی کہ سلہٹ اور صوبہ سرحد کی پاکستان میں شمولیت کے لئے ریفرنڈم کروایا جائے گا۔ 6 سے 17 جولائی 1947ء تک ہونے والے اس ریفرنڈم میں پچاس فیصد وؤٹ پڑے تھے جن میں سے 289.244 افراد کی اکثریت نے پاکستان کے حق میں فیصلہ دیا تھا جبکہ صرف 28.744 وؤٹ مخالفت میں آئے تھے۔ ایسے میں اصولاً کانگریسی حکومت کو مستعفی ہوجانا چاہیے تھا یا غیر مشروط طور پر نئی ریاست سے اپنی وفارداری کا اعلان کر دینا چاہئے تھا لیکن ایسا نہیں ہوا۔ 15 اگست 1947ء کو کانگریسی حکومت نے یوم آزادی کی تقریبات کا بائیکاٹ کیا جس پر مرکزی حکومت کا پیمانہ صبر لبریز ہو گیا تھا اور اس غیر جمہوری عمل کی نوبت آئی تھی۔

ڈاکٹر خان صاحب کون تھے؟

کانگریسی حکومت کی برطرفی کے بعد قائداعظمؒ کے حکم پر مسلم لیگ نے حکومت بنائی تھی اور خان عبدالقیوم خان پہلے وزیر اعلیٰ نامزد ہوئے تھے۔ برطرف کانگریسی حکومت کے وزیراعلیٰ ڈاکٹر خان صاحب جن کا اصل نام خان عبدالجبار خان تھا ، خان عبدالغفار خان کے بڑے بھائی اور نیشل عوامی پارٹی کے لیڈر خان عبدالولی خان کے تایا تھے۔ قیام پاکستان کے بعد وہ چھ سال تک جیل میں رہے۔ 1954ء میں انہیں محمدعلی بوگرا حکومت نے وزیر اطلاعات بنایا۔ اکتوبر 1955ء میں مسلم لیگ کے باغیوں کی ایک نئی سیاسی جماعت بننے والی ری پبلیکن پارٹی کے سربراہ تھے۔ 14 اکتوبر 1955ء کو جب ون یونٹ کا قیام عمل میں آیا تو ڈاکٹر خان صاحب کو صوبہ مغربی پاکستان کا پہلا وزیر اعلیٰ بننے کا اعزاز حاصل ہوا تھا۔ 9 مئی 1958ء کو انہیں ایک شخص نے ذاتی دشمنی کی بنیاد پر قتل کر دیا تھا۔






NWFP government dismissed..!

Friday, 22 August 1947

Governor General of Pakistan, Qaid-e-Azam Mohammad Ali Jinnah dismissed the government of North West Frontier Province (Khyber Pakhtunkhwa) on August 22, 1947..




پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.