PAK Magazine
Saturday, 08 May 2021, Week: 18

Pakistan History

سالانہ | ماہانہ | ہفتہ وارانہ | روزانہ | حروفانہ | اہم ترین | تحریک پاکستان | ذاتی ڈائریاں

Pakistan History

1957

وزیر اعظم حسین شہید سہروردی برطرف

جمعہ 11 اکتوبر 1957
Huseyn Shaheed Suhrawardy
حسین شہید سہروردی ، 12 ستمبر 1956ء کو پاکستان کے پانچویں وزیر اعظم مقرر ہوئے۔ اس عہدہ پر وہ صرف تیرہ ماہ تک فائز رہے اور 11 اکتوبر 1957ء کو صدر سکندر مرزا نے انہیں برطرف کر دیا تھا۔۔!

پاکستان عوامی لیگ کے سربراہ حسین شہید سہرودی کو پاک چین دوستی کا معمار بھی کہا جاتا ہے اور انہیں یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ چین کا دورہ کرنے والے وہ پہلے سربراہ مملکت تھے۔ انہی کے دور حکومت میں چینی وزیر اعظم چواین لائی نے پاکستان کا جوابی دورہ بھی کیا تھا۔ اس کے علاوہ مبینہ طور پر جولائی 1957ء میں اپنے دورہ امریکہ کے دوران انہوں نے باضابطہ طور پر امریکہ کو پشاور کے قریب بڈبیر کے مقام پر فوجی اڈے دینے کی منظوری بھی دی تھی۔ اپنے اسی دورے کے دوران وہ 13 جولائی 1957ء کو اپنے اس ویڈیو انٹرویو میں جہاں کشمیر اور نہری پانی کے تنازعات پر پاکستان کا موقف بیان کررہے ہیں وہاں یہ انکشاف بھی کر رہے ہیں کہ 1954ء میں امریکی امداد کے آغاز سے ہی پاکستان کی یہ حالت ہو گئی تھی کہ اس کے بجٹ کا چالیس فیصد حصہ صرف امریکی امداد پر مشتمل ہوتا تھا۔

حسین شہید سہروردی ، 8 ستمبر 1893ءکو بنگال کے شہر مدنا پور میں پیدا ہوئے تھے۔ کلکتہ اور مدراس سے ابتدائی تعلیم پائی۔ 1910ء میں سینٹ زیورس کالج سے ریاضی میں بی ایس کیا۔ 1913ء میں عربی زبان میں ایم اے کیا اور بیرون ملک تعلیم کے لیے اسکالر شپ حاصل کر کے انگلینڈ روانہ ہوئے جہاں آکسفوڈ سے ایم اے اور بی سی ایل کی ڈگریاں اعزاز سے حاصل کیں۔ وطن واپسی پر کلکتہ ہائی کورٹ میں وکالت شروع کی جہاں ان کے والد ایک جج تھے۔ 1921ء سے عملی سیاست میں حصہ لیا اور مسلم لیگ کے سرگرم رہنما رہے۔ قیام پاکستان تک بنگال کی صوبائی اسمبلی کے رکن تھے اور تجارت ، محنت ، صحت ، خوراک ، مالیات اور دیہات سدھار کے محکموں کے وزیر بھی تھے۔ 1946ء میں بنگال کے وزیر اعلیٰ بھی رہے۔ قیام پاکستان کے بعد وزیر اعظم لیاقت علی خان کے ساتھ شدید اختلافات کی وجہ سے جناح مسلم لیگ بنائی جو پھر عوامی لیگ کہلائی۔ 1954ء میں وزیر قانون بھی بنے۔ 1955ء میں قائد حزب اختلاف اور 1956ء میں ری پبلکن پارٹی کے تعاون سے حکومت سازی میں کامیاب ہوئے اور صرف تیرہ ماہ بعد دونوں پارٹیوں میں پھوٹ پڑنے سے برطرف ہوئے۔ 1956ء کے آئین کی مخالفت کی تھی لیکن اسی آئین کے تحت وزیر اعظم کے عہدے کا حلف بھی اٹھایا تھا۔ ایوب خان کے مارشل لاء کے بعد ان پر بھی ایبڈو کی پابندیاں لگیں اور وہ سیاست سے کنارہ کش ہو گئے تھے۔ 5 دسمبر 1963ء کو بیروت کے ایک ہوٹل میں ستر سال کی عمر میں حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کر گئے تھے۔ انہیں 8 دسمبر 1963ءکو ڈھاکہ میں مولوی فضل الحق کے پہلو میں دفن کیا گیا تھا۔




Huseyn Shaheed Suhrawardy

Friday, 11 October 1957

Pakistan's Prime Minister Huseyn Shaheed Suhrawardy was sacked on October 17, 1957. In this video he talks about Kashmir and water conflict with India. He was also asked about US aid to Pakistan which was 40% of total annual budget of Pakistan..!!!



PublicResourceOrg



World history
Pakistan Media

BBC Urdu Global websiteDW Urdu Global websiteVOA Urdu Global website Dawn, Karachi NewspaperDunya, Lahore NewspaperJang, Karachi NewspaperKhabrain, Lahore NewspaperPakistan, Lahore NewspaperUmmat, Karachi Newspaper ARY News TVDunya News TVExpress News TVGeo News TVGNN News TVNeo News TVPtv News TV
تاریخ پاکستان
دنیا میں مذہبی رحجانات
دنیا میں مذہبی رحجانات
جنرل ایوب کی بنیادی جمہوریت
جنرل ایوب کی بنیادی جمہوریت
پاکستان کے پہلے سکے
پاکستان کے پہلے سکے
محمد علی بوگرا فارمولا
محمد علی بوگرا فارمولا
بھٹو حکومت کی اقتصادی کارکردگی
بھٹو حکومت کی اقتصادی کارکردگی

مستقل سلسلے
اخبارات
اخبارات
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
بھٹو شہیدؒ
بھٹو شہیدؒ
آمر مردود
آمر مردود
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین


Some useful history sites

World links

Some useful links

Cricket links

IT links

Urdu poetry links

Pakistan
Pakistan

وکی پیڈیا پر پاکستان کی تاریخ


پاکستان کی عالمی درجہ بندی

پاکستان کی معیشت ، سیاست و ریاست اور دیگر اہم موضوعات میں عالمی درجہ بندیوں کی معلومات کو اپ ڈیٹ کیا جا رہا ہے۔ روایتی حریف بھارت اور جڑواں بھائی بنگلہ دیش کی درجہ بندیوں کے علاوہ دنیا کی ایک مثالی جمہوریت ڈنمارک کو بھی موازنے کے طور پر شامل کیا گیا ہے۔ درجہ بندیوں میں چھوٹے اعداد بہترین اور بڑے بدترین ہیں جبکہ تمام رقوم امریکی ڈالروں میں ہیں۔
آبادی (لاکھوں میں)225213726170058
آبادی کی درجہ بندی528113
رقبہ33792130
فی کس آمدن12851877188858439
فی کس آمدن کی درجہ بندی1541391427
ڈالر ریٹ16071846
معیشت کا حجم2233051
زرمبادلہ کے ذخائر (اربوں میں)135844378
زرمبادلہ کے ذخائر کی درجہ بندی7154631
خوشحالی123591073
انسانی ترقی15413313110
تعلیم1281121552
صحت عامہ123591073
فوجی طاقت1044554
دہشت گردی سے متاثر783385
امن و امان کی صورتحال1531411015
مذہبی وابستگی50543145
ایمانداری124861461
جمہوری روایات10553767
پاسپورٹ کی عزت107851015


Pakistan Rupee Exchange Rate