PAK Magazine
Sunday, 27 November 2022, Week: 47

Pakistan Chronological History
Annual
Annual
Monthly
Monthly
Weekly
Weekly
Daily
Daily
Alphabetically
Alphabetically


1948
پاکستان کا پہلا فلم سٹوڈیو
پاکستان کا پہلا فلم سٹوڈیو
2022
جمہوری انڈیکس 2021
جمہوری انڈیکس 2021
1996
ملک معراج خالد
ملک معراج خالد
2020
پارلیمنٹ اور پی ٹی وی حملہ کیس
پارلیمنٹ اور پی ٹی وی حملہ کیس
1971
میاں محمود علی قصوری
میاں محمود علی قصوری


1956

Sikandar Mirza as President

Friday, 23 March 1956

The military parade on 23 March 1956 when the last Governor General of Pakistan Major General Sikandar Mirza became the first President of Pakistan after the constitution was adopted..

سکندر مرزا صدر بنے

جمعه 23 مارچ 1956
سکندر مرزا

23 مارچ 1956ء کو سکندرمرزا نے پاکستان کے پہلے صدر کے عہدے کا حلف اٹھایا تھا۔۔!

میجر جنرل (ریٹائرڈ) سکندر مرزا ، پاکستان کے آخری گورنر جنرل تھے۔ جب نو سالہ سعی کے بعد 29 فروری 1956ء کو پاکستان کا پہلا آئین منظور ہوا اور پاکستان ایک "اسلامی جمہوریہ" بن گیا تھا اور تاجدار برطانیہ کی عملداری سے باہر نکل آیا تو انھیں پاکستان کے پہلے صدر ہونے کا اعزاز حاصل ہوا تھا۔ انھوں نے چار وزرائے اعظم فارغ کیے تھے۔ ان کے غرور و تکبر کا یہ عالم ہوتا تھا کہ وہ وزرائے اعظم سے حلف اپنے دفتر میں اپنی کرسی پر بیٹھ کر لیتے تھے جبکہ حلف لینے والا (وزیر اعظم) ایک ملازم کی طرح سے کھڑا ہوکر حلف اٹھاتا تھا۔

پاکستان میں پہلا مارشل لاء کس نے لگایا تھا ؟

صدر پاکستان میجرجنرل (ر) سکندرمرزا نے جس آئین کے تحت صدارت کے عہدے کا حلف اٹھایا تھا ، اسے ہی منسوخ کرنے ، دستور ساز اسمبلی کو توڑنے اورملک بھر میں مارشل لا ء لگا کر چیف آرمی سٹاف جنرل محمد ایوب خان (جو اسوقت وزیر دفاع بھی تھے) کو مارشل لاء ایڈمنسٹریٹر مقرر کر نے کاشرمناک "اعزاز" بھی حاصل کیا تھا۔ مارشل لاء کا مطلب ، جنگل کا قانون ہوتا ہے کہ جو طاقت ور ہے اسی کا حکم چلے گا۔ نتیجہ یہ ہوا کہ تین ہفتوں ہی میں موصوف کو بوریا بستر باندھ کر ملک بدر ہونا پڑا تھا اور لندن میں جلا وطنی کے دور میں ایک ہوٹل میں منیجر کی جاب کرنا پڑی تھی۔ جب 12 نومبر 1969ء کو انتقال ہوا تو پاکستان نے ان کی لاش بھی قبول کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ اگر شیعہ نہ ہوتے تو شاید ایران بھی انہیں پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ دفن نہ کرتا …… اللہ اکبر……!!!

سکندرمرزا کے صدارتی دور کے اہم واقعات

  • 23 اپریل 1956ء کو پہلی سرکاری جماعت ری پبلیکن پارٹی وجود میں آئی تھی۔
  • 2 مئی 1956ء کو فوجی اور شہری اعزازت کا اعلان کیا گیا تھا۔
  • 14 جون 1956ء کو چین میں پہلے پاکستانی سفیر کی تعیناتی ہوئی۔
  • 27 جون 1956ء کو پاکستان اور روس کا پہلا تجاری معاہدہ ہوا۔
  • 31 اگست 1956ء کو مشرقی پاکستان میں گورنر راج کا نفاذ ہوا۔
  • 10 ستمبر 1956ء کو وزیراعظم چوہدری محمدعلی مستعفی ہوئے اور حسین شہید سہروردی وزیراعظم بنائے گئے۔
  • 17 جنوری 1957ء کو پہلی بار پاکستان میں سرکاری طور پر فلمی ایوارڈ دیے گئے تھے۔
  • 2 فروری 1957ء کو صدرسکندرمرزا نے گدو بیراج کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔
  • 8 مارچ 1957ء کو سکندرمرزا نے سٹیٹ بینک کی بارہ منزلہ عمارت کا سنگ بنیاد رکھا۔
  • 20 مارچ 1957ء کو صوبہ مغربی پاکستان کی حکومت برخاست اور گورنرراج کا نفاذ ہوا۔
  • 3 اپریل 1957ء کو صوبہ مشرقی پاکستان کی اسمبلی نے مکمل خودمختاری کا بل بھاری اکثریت سے منظور کرلیا۔
  • 17 ستمبر 1957ء کو صوبہ مغربی پاکستان کی اسمبلی نے بھاری اکثریت سے ون یونٹ توڑنے کی سفارش کردی۔
  • ستمبر 1957ء اور مارچ 1958ء میں پہلی بار ذوالفقارعلی بھٹو ، سرکاری طور پر سامنے آئے ، اقوام متحدہ کی کانفرنسوں میں ان کی تقاریر کو بےحد سراہا گیا تھا۔
  • 30 ستمبر 1957ء کو الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فروری 1959ء میں پہلے عام انتخابات کروائے جا سکتے ہیں۔
  • 18 اکتوبر 1957ء کو وزیراعظم حسین شہید سہروردی برطرف اور آئی آئی چندریگر وزیراعظم بنائے گئے تھے۔
  • 11 دسمبر 1957ء کو چندریگر وزارت کا استعفیٰ ، فیروز خان نون ساتویں وزیراعظم بن گئے۔
  • 24 دسمبر 1957ء کو سٹیٹ بینک آف پاکستان نے پہلی بار قائداعظمؒ کی تصاویر والے نوٹ جاری کیے تھے۔
  • 9 مئی 1958ء کو صوبہ مغربی پاکستان کے سابق وزیراعلیٰ ڈاکٹر خان صاحب کو قتل کردیا گیا۔
  • 6 ستمبر 1958ء کو گوادر ، پاکستان میں واپس شامل ہوا۔
  • 25 ستمبر 1958ء کو ڈپٹی سپیکر شاہد علی ، مشرقی پاکستان اسمبلی کے اجلاس کی ہڑبونگ میں مارے گئے۔
  • 6 اکتوبر 1958ء کو بلوچستان کی ریاست قلات کے خان نے بغاوت کی جو کچل دی گئی۔
  • 7 اکتوبر 1958ء کو سکندرمرزا نے جمہوریت کی بساط لپیٹتے ہوئے ملک میں مارشل لاء لگا دیا۔
  • 27 اکتوبر 1958ء کو سکندرمرزا ، اپنی بیگم ناہیدمرزا کے ساتھ ملک بدر کردیے گئے۔





Sikandar Mirza as President (video)

Credit: World Tour


1947
پاکستان کی پہلی اسمبلی
پاکستان کی پہلی اسمبلی
1971
ہتھیار ڈالنے کی دستاویز پر دستخط
ہتھیار ڈالنے کی دستاویز پر دستخط
1960
بنیادی جمہوریتیں
بنیادی جمہوریتیں
1957
چندریگر ، وزیر اعظم بنے
چندریگر ، وزیر اعظم بنے
1972
کراچی کا ایٹمی بجلی گھر
کراچی کا ایٹمی بجلی گھر

تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر اہم تاریخی واقعات کو بتاریخ سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ ترتیب سے چند کلکس کے نیچے پیش کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں اہم ترین واقعات اور شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مخصوص صفحات ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!



تاریخ پاکستان ، اہم موضوعات
تحریک پاکستان
تحریک پاکستان
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
شہ سرخیاں
شہ سرخیاں
سیاسی ڈائری
سیاسی ڈائری
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
بے نظیر بھٹو
بے نظیر بھٹو
نواز شریف
نواز شریف
عمران خان
عمران خان
سکندرمرزا
سکندرمرزا
جنرل ایوب
جنرل ایوب
جنرل یحییٰ
جنرل یحییٰ
جنرل ضیاع
جنرل ضیاع
جنرل مشرف
جنرل مشرف
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
انتخابات
انتخابات
امریکی امداد
امریکی امداد
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

چند اہم بیرونی لنکس


پاکستان کی فلمی تاریخ

پاکستانی فلموں ، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر ایک منفرد اور معلوماتی سلسلہ

حبیب
حبیب
طارق عزیز
طارق عزیز
رشید عطرے
رشید عطرے
ننھا
ننھا
سنتوش کمار
سنتوش کمار


PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.