PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Thursday, 13 June 2024, Day: 165, Week: 24

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

جمعتہ المبار 2 دسمبر 1988

بے نظیر بھٹو

ذوالفقار علی بھٹوؒ کی بیٹی ، بے نظیر بھٹو ، عالم اسلام کی پہلی خاتون وزیر اعظم بنی۔۔!

16 نومبر 1988ء کے انتخابات میں سب سے بڑی سیاسی پارٹی ہونے کی وجہ سے پاکستان پیپلز پارٹی کو حکومت بنانے کا پورا حق حاصل تھا لیکن جنرل ضیاع مردود کی باقیات نے ہر ممکنہ کوشش کی کہ بھٹو کی بیٹی کو اس کے جائز حق سے محروم رکھا جائے۔ گیارہ سالہ دور استبداد کے بعد شیطانی قوتوں کے لیے یہ ایک بہت بڑی تاریخی اور اخلاقی شکست تھی اور انھیں چلو بھر پانی میں ڈوب مرنے کی کہیں جگہ نہیں مل رہی تھی۔

طاغوتی طاقتوں کی شکست

دو ہفتوں کی محلاتی سازشوں اور نفسیاتی جنگ کے بعد طاغوتی طاقتوں نے ہتھیار ڈال دیئے اور نامزد صدر غلام اسحاق خان نے بے نظیر بھٹو کو حکومت بنانے کی دعوت دی۔ یہ سب کچھ سمجھوتوں کے بغیر ممکن نہیں تھا۔ اسحاق خان کو صدر کے طور پر قبول کرنے کے علاوہ صاحبزادہ یعقوب علی خان کو وزیرخارجہ کا اہم منصب بھی دینا پڑا جس سے یہ اندازہ لگانا مشکل نہ تھا کہ اصل طاقت کس کے پاس ہے۔ بے نظیر کے سب سے بڑے سیاسی حریف ، میاں نواز شریف کو پنجاب کے وزیراعلیٰ کے عہدے پر اکتفا کرنا پڑا۔

بے نظیر بھٹو کو صرف 20 ماہ تک حکومت کرنے کا موقع ملا۔ اس دوران یکم نومبر 1989ء کو تحریک عدم اعتماد سے اس کی حکومت گرانے کی کوشش بھی کی گئی۔ بالآخر 6 اگست 1990ء کو 8ویں ترمیم کے وار سے کرپشن کے بھونڈے اور بے وزن الزامات لگا کر دنیائے اسلام کی تاریخ کی پہلی خاتون وزیراعظم کو برطرف کردیا گیا تھا۔

اسلامی تاریخ کی مشہور ترین خواتین لیڈر

یاد رہے کہ ڈیڑھ ہزار سالہ اسلامی تاریخ میں چند گنی چنی خواتین ہی قیادت کے اعلیٰ منصب پر فائز ہوئی ہیں۔ ان میں سے پہلی ہستی ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہؓ کی تھی جن کی قیادت میں اصحاب مدینہؓ نے 656ء میں خلیفتہ المسلمین حضرت علیؑ کے خلاف جنگ جمل لڑی تھی۔ دوسری مشہور خاتون ، 1236ء میں ہندوستان پر حکومت کرنے والی رضیہ سلطان تھی جس نے اپنے نااہل بھائیوں کے خلاف اقتدار کی جنگ جیتی تھی لیکن زیادہ عرصہ تک سکون کا سانس نہیں لے سکی تھی۔

پاکستان میں بے نظیر بھٹو کے بعد دوسرا بڑا نام محترمہ فاطمہ جناح کا تھا جنھوں نے صدر ایوب خان کے خلاف صدارتی انتخاب لڑا تھا لیکن شکست کھا گئی تھیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ مذہبی سیاست کرنے والوں میں سے جماعت اسلامی نے فاطمہ جناح کی حمایت کی تھی لیکن جمیعت العلمائے اسلام نے مخالفت کی تھی۔ بے نظیر بھٹو کے معاملے میں ان دونوں سیاسی پارٹیوں نے الٹا موقف اپنایا تھا۔






Benaziar Bhutto as Prime Minister

Friday, 2 December 1988

Zulfikar Ali Bhutto's daughter, Benazir Bhutto became the first ever female Prime Minister in any Islamic country on December 2, 1988..




پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.