PAK Magazine
Thursday, 30 June 2022, Week: 26

Pakistan Chronological History
Annual
Annual
Monthly
Monthly
Weekly
Weekly
Daily
Daily
Alphabetically
Alphabetically


1967

Pakistan Peoples Party

Thursday, 30 November 1967

Pakistan Peoples Party was formed on November 30, 1967 by its founder and chairman Zulfikar Ali Bhutto..

پیپلز پارٹی کا قیام

جمعرات 30 نومبر 1967
Zulfikar Ali Bhuttos PPP

پاکستان کے وزیرخارجہ ذوالفقار علی بھٹوؒ نے جنگ ستمبر 1965ء کے نتیجے میں ہونے والے معاہدہ تاشقند پر شدید تحفظات کی وجہ سے آٹھ سالہ رفاقت کے بعد 17 جون 1966ء کو صدر ایوب خان کی حکومت کو خیرآباد کہہ دیا تھا۔

دارالحکومت راولپنڈی/اسلام آباد سے جب وہ ٹرین پر کراچی کے لیے روانہ ہوئے تو ہر سٹیشن پر عوام الناس کے ٹھاٹھیں مارتے ہوئے سمندر نے ان کا شاندار استقبال کیا تھا جس سے بھٹو صاحب کو اپنی عوامی مقبولیت کا اندازہ ہوا تھا۔

بھٹو کا سیاست میں آنے کا فیصلہ

بھٹو صاحب ، ایوب حکومت میں مختلف وزارتوں میں اپنی بے مثل کارکردگی کی بنیاد پر ایک قومی ہیرو بن چکے تھے اور ایک نااہل آمرانہ حکومت کے خلاف قوم کی آواز بن گئے تھے۔ ایسے میں انہوں نے عملی سیاست میں حصہ لینے کا فیصلہ کر لیا تھا۔ بقول جسٹس جاوید اقبال ، محترمہ فاطمہ جناح ، بھٹو صاحب کو اپنی جماعت ، کونسل مسلم لیگ میں شامل کرنا چاہتی تھیں لیکن بھٹو صاحب نے اپنی سیاسی جماعت بنانے کا فیصلہ کر لیا تھا۔ اس سے قبل ان کے ابتدائی دور میں ان کے والد بھٹو کی عوامی لیگ میں شمولیت کے خواہشمند تھے لیکن اس پارٹی کو مغربی پاکستان میں کبھی پذیرائی نہیں ملی تھی۔

عوام دوست سیاسی پارٹی

30 نومبر 1967ء کو لاہور میں پیپلز پارٹی کا قیام عمل میں آیا جس کے چئیر مین ، ذوالفقار علی بھٹو منتخب ہوئے تھے۔ سوشلسٹ نظریات کی اس عوام دوست سیاسی پارٹی کا نعرہ "روٹی ، کپڑا اور مکان" تھا جبکہ بنیادی منشور تھا:

  • اسلام ہمارا دین ہے
  • جمہوریت ہماری سیاست ہے
  • طاقت کا سرچشمہ عوام ہیں
  • سوشلزم ہماری معیشت ہے

دیکھتے ہی دیکھتے پیپلز پارٹی ، مغربی پاکستان کی سب سے مقبول ترین سیاسی جماعت بن گئی تھی لیکن مشرقی پاکستان میں اسے قطعاً پذیرائی نہ مل سکی تھی جہاں بنگالی قوم پرستی اپنے جوبن پر تھی۔

پہلے ہی انتخابات میں مثالی کامیابی

صرف تین سال بعد یعنی 1970ء میں ہونے والے عام انتخابات میں مذہبی اور نظریاتی جماعتوں کے مقابلے میں مغربی پاکستان میں پیپلز پارٹی کو زبردست کامیابی حاصل ہو گئی تھی۔ سانحہ مشرقی پاکستان کی وجہ سے صرف ایک سال بعد وہ بر سر اقتدار بھی تھے۔ بھٹو کی پیپلز پارٹی واحد سیاسی جماعت رہی ہے کہ جس کی جڑیں عوام میں تھیں اور جسے جمہوریت دشمن قوتوں نے ختم کرنے کے لئے سازشوں اور زیادتیوں کے علاوہ سرکاری خزانے کے منہ تک کھولے لیکن ناکامی ان کا مقدر بنی۔ پاکستان میں جمہوری اقدار و روایات کے لئے اس جماعت کی کارکردگی مثالی رہی ہے۔

اینٹی اسٹیبلشمنٹ پارٹی

بھٹو دشمن قوتوں نے اس عوامی پارٹی کو تقسیم کرنے کی بڑی کوشش کی لیکن ناکام رہے۔ اس سلسلے کا آغاز بھٹو کے زوال کے فوراَ بعد شروع ہو گیا تھا جب 1977ء میں مولانا کوثر نیازی سے پروگریسو پیپلز پارٹی بنوائی گئی تھی۔ غلام مصطفیٰ جتوئی کی نیشنل پیپلز پارٹی ، غنویٰ بھٹو اور آفتاب شیر پاؤ کے گروپس اور مشرف کے دور میں پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرز بنائی گئی جس سے فیصل صالح حیات کی قیادت میں پیپلز پارٹی پیٹریاٹ کے بگوڑے پیدا کئے گئے تھے۔ اب آثار ہیں کہ زرداری صاحب کی قیادت میں اسٹیبلشمنٹ کی دیرینہ آرزو پوری ہوجائے گی اور بھٹو کی پارٹی تاریخ کا حصہ بن جائے گی۔۔!

پیپلز پارٹی کے قیام پر سرکاری تبصرہ




Ayub-Bhutto relations
(Daily Jang Karachi, 31 January 1966)



Pakistan Peoples Party (video)

Credit: ThamesTv

مارچ 1969ء میں لیا گیا جناب ذوالفقار علی بھٹو کا ایک یادگار انٹرویو جس میں اس وقت کی پوری تصویر ملتی ہے۔





World history
Latest News on PAK Magazine
Pakistan Media

PAK Magazine presents latest news from newspapers, TV, social media, political parties, official's and many renowned journalists from Pakistan and around the world.


تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر اہم تاریخی واقعات کو بتاریخ سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ ترتیب سے چند کلکس کے نیچے پیش کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں اہم ترین واقعات اور شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مخصوص صفحات ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!



2020
پارلیمنٹ اور پی ٹی وی حملہ کیس
پارلیمنٹ اور پی ٹی وی حملہ کیس
1972
کراچی کا ایٹمی بجلی گھر
کراچی کا ایٹمی بجلی گھر
1947
قائد اعظمؒ کا پاسپورٹ
قائد اعظمؒ کا پاسپورٹ
1957
گدو بیراج
گدو بیراج
2022
وزیرخارجہ بلاول بھٹو زرداری
وزیرخارجہ بلاول بھٹو زرداری


تاریخ پاکستان ، اہم موضوعات

تحریک پاکستان
تحریک پاکستان
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
شہ سرخیاں
شہ سرخیاں
سیاسی ڈائری
سیاسی ڈائری
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
بے نظیر بھٹو
بے نظیر بھٹو
نواز شریف
نواز شریف
عمران خان
عمران خان
سکندرمرزا
سکندرمرزا
جنرل ایوب
جنرل ایوب
جنرل یحییٰ
جنرل یحییٰ
جنرل ضیاع
جنرل ضیاع
جنرل مشرف
جنرل مشرف
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
انتخابات
انتخابات
امریکی امداد
امریکی امداد
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

چند اہم بیرونی لنکس


Pakistan Exchange Rates

Pakistan Rupee Exchange Rate



PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.