PAK Magazine
Saturday, 24 September 2022, Week: 38

Pakistan Chronological History
Annual
Annual
Monthly
Monthly
Weekly
Weekly
Daily
Daily
Alphabetically
Alphabetically


1933
چوہدری رحمت علی کا پاکستان
چوہدری رحمت علی کا پاکستان
1968
تربیلا ڈیم
تربیلا ڈیم
1947
قائد اعظمؒ کا پاسپورٹ
قائد اعظمؒ کا پاسپورٹ
1972
پاکستان ، دولت مشترکہ سے الگ ہوا
پاکستان ، دولت مشترکہ سے الگ ہوا
1974
بھٹو اور مجیب
بھٹو اور مجیب


1951

Khawaja Nazimuddin

Tuesday, 16 October 1951

Khawaja Nazimuddin was second Prime Minister of Pakistan..

خواجہ ناظم الدین ، وزیراعظم بنے

منگل 16 اکتوبر 1951
خواجہ ناظم الدین

خواجہ ناظم الدین ، 16 اکتوبر 1951ء کو پاکستان کے دوسرے وزیراعظم مقرر ہوئے تھے۔۔!

انھیں یہ منفرد اعزاز حاصل ہے کہ وہ دو اعلیٰ عہدوں پر فائز رہنے والے پہلے بنگالی لیڈر تھے۔ قائداعظمؒ کے 11 ستمبر 1948ء کو انتقال کے بعد 17 اکتوبر 1951ء تک وزیر اعظم لیاقت علی خان کے قتل تک گورنرجنرل کے عہدے پر فائز رہے۔ اس کے بعد 17 اپریل 1953ء کو اپنے برطرف ہونے تک پاکستان کے وزیراعظم رہے تھے۔

ایک کمزور سیاستدان

خواجہ صاحب ، ایک انتہائی کمزور سیاستدان اور حکمران تھے اور بنگالیوں کی بے بسی کی منہ بولتی تصویر تھے۔ جب گورنرجنرل تھے تو اصل طاقت وزیراعظم لیاقت علی خان کے پاس تھی حالانکہ گورنرجنرل کا عہدہ زیادہ بااختیار تھا۔ گورنرجنرل سے وزیراعظم بنے تو اصل اختیارات واپس گورنرجنرل ملک غلام محمد کے پاس چلے گئے تھے جو بیوروکریسی کے نمائندے تھے۔ مزے کی بات ہے کہ جس شخص کو انھوں نے خود گورنرجنرل کے عہدے پر فائز کیا تھا ، اسی نے ان کو گھر بھیج دیا تھا۔۔!

ان کے دور میں کئی ایک اہم واقعات ہوئے جن میں سے ایک غذائی قلت بھی تھی جس پر انھیں طنزیہ "قائد قلت" بھی کہا جاتا تھا۔ ان کے دور کے دیگر اہم واقعات کچھ اس طرح سے تھے:

مادری زبان کا عالمی دن کیوں منایا جاتا ہے؟

خواجہ ناظم الدین ، ایک انتہائی کمزور وزیراعظم ثابت ہوئے تھے جن کے دور کا سب سے بڑا واقعہ "بنگالی زبان کے شہدا" تھے۔ خواجہ صاحب نے بھی حسب معمول قائداعظمؒ اور لیاقت علی خان کے اس غیردانشمندانہ بیان کو دھرایا تھا کہ"صرف اردو ہی پاکستان کی قومی زبان ہوگی" جس پر ڈھاکہ میں بڑا زبردست احتجاج ہوا تھا اور 21 فروری کے ایک مظاہرے میں 8 طالب علم ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔ ان کی یاد میں دنیا بھر 21 فروری کو مادری زبان کا عالمی دن منایا جاتا ہے لیکن پاکستان میں اس دن نام نہاد قومی میڈیا کو سانپ سونگھ جاتا ہے۔

جب لاہور میں مارشل لاء لگایا گیا تھا

خواجہ ناظم الدین کے دور کا دوسرا اہم ترین واقعہ 1953ء کے قادیانی فسادات تھے جن میں ہزاروں افراد لقمہ اجل بنے تھے۔ اس دوران پہلی بار لاہور میں 70 دن کے لیے مارشل لاء بھی لگایا گیا تھا۔ انھی فسادات کے نتیجے میں خواجہ صاحب 17 اپریل 1953ء کو برطرفی عمل میں آئی تھی۔

خواجہ ناظم الدین کون تھے؟

خواجہ ناظم الدین ، 19 جولائی 1894ء کو ڈھاکہ میں ایک نواب خاندان میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم علی گڑھ سے اور اعلیٰ تعلیم ، انگلستان سے حاصل کی۔ سیاسی زندگی کا آغاز 1922ء میں ڈھاکہ میونسپل کمیٹی کے چیئرمین منتخب ہونے سے کیا۔ بنگال کی صوبائی کابینہ میں وزیر تعلیم اور وزیر داخلہ کے مناصب پر بھی فائز رہے۔ 1937ء سے 1947ء تک آل انڈیا مسلم لیگ کی ورکنگ کمیٹی کے رکن بھی رہے۔ 1946ء میں کلکتہ کا پہلا انگریزی روزنامہ Star of India جاری کیا۔ قائد اعظمؒ نے 15 اگست 1947ء کو مشرقی بنگال کے وزیر اعلیٰ کا عہدہ تفویض کیا تھا۔ 17 اپریل 1953ء کو بطور وزیراعظم اپنی برطرفی کے بعد گوشہ گمنامی میں رہے۔ 22 اکتوبر 1964ء کو انتقال ہوا۔ ڈھاکہ میں مقبرہ ہے۔






Khawaja Nazimuddin (video)

Credit: Pak Broad Cor


2022
وزیراعظم شہباز شریف
وزیراعظم شہباز شریف
1971
آمر کا مجوزہ آئین
آمر کا مجوزہ آئین
1930
نظریہ پاکستان
نظریہ پاکستان
1966
پہلا ایٹمی بجلی گھر
پہلا ایٹمی بجلی گھر
1940
قرارداد پاکستان
قرارداد پاکستان

تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر اہم تاریخی واقعات کو بتاریخ سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ ترتیب سے چند کلکس کے نیچے پیش کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں اہم ترین واقعات اور شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مخصوص صفحات ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!



تاریخ پاکستان ، اہم موضوعات
تحریک پاکستان
تحریک پاکستان
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
شہ سرخیاں
شہ سرخیاں
سیاسی ڈائری
سیاسی ڈائری
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
بے نظیر بھٹو
بے نظیر بھٹو
نواز شریف
نواز شریف
عمران خان
عمران خان
سکندرمرزا
سکندرمرزا
جنرل ایوب
جنرل ایوب
جنرل یحییٰ
جنرل یحییٰ
جنرل ضیاع
جنرل ضیاع
جنرل مشرف
جنرل مشرف
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
انتخابات
انتخابات
امریکی امداد
امریکی امداد
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

چند اہم بیرونی لنکس


پاکستان کی فلمی تاریخ

پاکستانی فلموں ، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر ایک منفرد اور معلوماتی سلسلہ

ظہورناظم
ظہورناظم
مسعودپرویز
مسعودپرویز
طفیل فاروقی
طفیل فاروقی
صفدرحسین
صفدرحسین
ظہیر کاشمیری
ظہیر کاشمیری


PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.