PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Tuesday, 25 June 2024, Day: 177, Week: 26

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

جمعتہ المبارک 26 اپریل 1963

پاک بھارت کشمیر مذاکرات

Bhutto and Swaran Singh
بھارت سے کشمیر مذاکرات کی قیادت
ذوالفقار علی بھٹو نے کی تھی

ذوالفقار علی بھٹوؒ سے بڑا کشمیر کاز کا حامی کبھی کوئی نہیں رہا۔ انہوں نے صرف زبانی جمع خرچ ہی نہیں کیا تھا بلکہ تمام تر ممکنہ کوششیں بھی کی تھیں۔۔!

کشمیر پر پاک بھارت مذاکرات

بھٹو نے بھارت کے ساتھ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے اعلیٰ سطحی تفصیلی مذاکرات کیے تھے۔ جب گھی سیدھی انگلی سے نہ نکل پایا تو اس وقت کے فوجی حکمران جنرل ایوب خان کو کشمیر کی آزادی کے لئے 1965ء کی جنگ کی تجویز دی تھی۔ لیکن اس تجویز کا قابل عمل ہونا یا اس پر عمل درآمد کرنا ، بھٹو کا کام نہیں تھا۔ جن کا کام تھا ، انھوں نے اس تجویز کو قابل عمل سمجھا اور عمل بھی کیا لیکن بدقسمتی سے قوم کی توقعات پر پورا نہ اتر سکے تھے۔

پاکستان اوربھارت کے مابین کشمیر کے مسئلہ پر مذاکرات کے چھ ادوار دسمبر 1962ء سے لے کر مئی 1963ء تک کراچی اور دہلی میں ہوئے تھے جن کی سربراہی ، پاکستان سے ذوالفقار علی بھٹوؒ اور بھارت کی طرف سے وزیر خارجہ سردار سورن سنگھ نے کی تھی۔

ذوالفقار علی بھٹوؒ ، 23 جنوری 1963ء کو باقاعدہ وزیر خارجہ مقرر ہوئے تھے لیکن اپنی خداداد صلاحیتوں کے بل بوتے پر 1960ء ہی سے کئی اہم خارجی امور سرانجام دے رہے تھے۔ ایوب حکومت کے دونوں وزرائے خارجہ ، منظور قادر اور محمد علی بوگرا محض امریکہ بہادر کو خوش کرنے کے لئے مہروں سے زیادہ اہمیت نہیں رکھتے تھے۔

کشمیر پر مذاکرات کیوں ممکن ہوئے؟

کشمیر پر مذاکرات ، امریکہ اور برطانیہ کے دباؤ پر ہورہے تھے جنھوں نے چین کے خلاف اکتوبر 1962ء کی ہندچینی جنگ میں بھارت کی نہ صرف سیاسی حمایت کی تھی بلکہ بھر پور مالی اور مادی امداد بھی کی تھی۔ انھوں نے اپنے اتحادی اور پٹھو جنرل ایوب خان کو یہ لالی پاپ دیا تھا کہ وہ اس بے وفائی اور مفاد پرستی کے عوض بھارت کو کشمیر پر مذاکرات کے لئے مجبور کریں گے۔ لیکن یہ تصور کرنا کہ بھارت ، وادی کشمیر کو طشتری میں رکھ کر پاکستان کو پیش کردے گا ، محض ایک احمقانہ سوچ تھی۔ بھارت ، پندرہ سو مربع میل علاقہ مزید دے کر کنٹرول لائن کو مستقل سرحد قرار دینے پر رضامند ہوگیا تھا لیکن پاکستان پورے جموں و کشمیر اور لداخ سے کم پر راضی نہیں تھا۔

ویسے بھی حق ملکیت جیسے بڑے بڑے تنازعات طاقت و حکمت کے بغیر طے نہیں ہوتے اور کامیابی صرف طاقتور ہی کی ہوتی ہے یا جو بروقت فیصلے کرنے کی صلاحیت رکھتا ہو۔ پاکستان نے جو جنگ 1965ء میں کی تھی ، اگر وہ ، چین کے ساتھ مل کر 1962ء میں کر لیتا تو نتائج شاید مختلف ہوتے لیکن 1965ء کی پاک بھارت جنگ یا " کشمیر بزور شمشیر" کی ناکامی نے مسئلہ کشمیر کو ہمیشہ کے لئے سرد خانے میں ڈال دیا تھا۔






Kashmir talks

Friday, 26 April 1963

5th round of Kashmir talks between Pakistan's foreign Minister Mr. Zulfiqar Ali Bhutto and Indian Foreign Minister Mr. Swaran Singh in Karachi on 26 April 1963..


Kashmir talks (video)

Credit: British Movietone



پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.