PAK Magazine
Sunday, 14 April 2024, Week: 15

Pakistan Chronological History
Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

1949

عوامی لیگ

جمعرات 23 جون 1949
عوامی لیگ
عوامی لیگ
بنگلہ دیش کی خالق جماعت تھی

عوامی لیگ ، بنگلہ دیش کی خالق جماعت تھی۔۔!

23 جون 1949ء کو سابقہ مشرقی پاکستان کے دارالحکومت ڈھاکہ میں قائم ہونے والی "عوامی مسلم لیگ" کے بانی اور پہلے صدر مولانا عبدالحمید خان بھاشانی تھے جو ایک انقلاب پرست سیکولر مولوی تھے اور غریبوں کے حقوق کے ترجمان تھے۔

ان کے ساتھی یار محمد خان ، خزانچی تھے جو مشرقی پاکستان کے پہلے اور ممتاز بنگالی اخبار "اتفاق" کے مالک بھی تھے۔ عطا الرحمان ، نائب صدر ، شمس الحق ، جنرل سیکرٹری اور شیخ مجیب الرحمان ، جوائنٹ سیکرٹری تھے جو 1953ء سے 1966ء تک جنرل سیکرٹری اور 1966ء سے 1971ء تک صدر رہے۔ انھیں "بانیِ بنگلہ دیش" ہونے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

عوامی لیگ کیوں بنی؟

1906ء میں ڈھاکہ ہی میں آل انڈیا مسلم لیگ کا قیام عمل میں آیا جو ہندوستان کے مسلمانوں کے حقوق کی ترجمان بنی۔ 1940ء کی قراردادِ لاہور (جس کو غلطی سے "قراردادِپاکستان" بھی کہا جاتا ہے) میں اس جماعت نے متفقہ طور پر برصغیر کے مسلم اکثریتی علاقوں پر مشتمل آزاد اور خودمختار مسلم ریاستوں کی بات کی تھی۔ 1946ء کی دہلی قرارداد میں مسلم لیگ نے ایک الگ تھلگ آزاد پاکستان کی بات کی اور 1947ء میں آزادی حاصل کر لی۔

آزادی سے قبل تو مشترکہ جدوجہد کے نتیجہ میں حریف ہندو اور انگریز تھے لیکن آزادی کے بعد صورتحال بالکل مختلف تھی۔ مسلم لیگ ، بنیادی طور پر نوابوں اور جاگیرداروں کی جماعت تھی جس میں غریب بنگالیوں کی گنجائش نہیں تھی۔ بنگالیوں سے ہر شعبہ میں تعصب برتا جانے لگا۔ سیاست ، معیشت اور فوج میں خاص طور پر یہ فرق واضح طور پر نظر آنے لگا۔ یہی تعصب اور تنگ نظری ، عوامی لیگ کے قیام کا باعث بنی جو ابتداء میں "آل پاکستان عوامی مسلم لیگ" تھی لیکن بعد میں صرف "عوامی لیگ" رہ گئی۔

عوامی لیگ کی مقبولیت

بدقسمتی سے پاکستان ٹوٹنے کا آغاز زبان کے مسئلہ پر ہوا جب ڈھاکہ میں طلباء نے اردو زبان کے تسلط کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا اور 10 دسمبر 1947ء کو بنگالی کو قومی زبان بنانے کے حق میں مظاہرے کیے تھے۔ جلتی پر تیل 23 فروری 1948ء کے سرکاری بیان نے ڈالا۔ رہی سہی کسر خود بانیِ پاکستان اور گورنرجنرل حضرت قائداعظمؒ محمدعلی جناح کی 21 مارچ 1948ء کو ڈھاکہ کے ایک جلسہ عام میں اس بیان نے پوری کر دی کہ "پاکستان کی قومی زبان ، صرف اور صرف اردو ہی ہوگی۔۔"

قائد کے اس بیان پر "قراردادِپاکستان" پیش کرنے والے مولوی فضل الحق نے یہ سخت بیان دیا تھا کہ "گورنر جنرل کا یہ کام نہیں کہ وہ بتائے کہ ملک کی سرکاری زبان کونسی ہو گی، یہ فیصلہ عوام کریں گے۔۔"

بنگالیوں کی حق تلفی

21 فروری 1952ء کو بنگالی زبان کی تحریک کے دوران ہلاک ہونے والے طلباء نے بنگالیوں کو پاکستان سے بہت دور کر دیا تھا۔ یہی وجہ تھی جب 1954ء میں مشرقی پاکستان کے اکلوتے صوبائی انتخابات ہوئے تو 309 کے ایوان میں مسلم لیگ صرف 10 سیٹیں حاصل کر سکی جبکہ اکیلی عوامی لیگ نے 143 سیٹیں جیت لی تھیں جبکہ اس کے اتحاد نے کل 223 سیٹیں جیتی تھیں۔ اس کے باوجود بنگالیوں کی اس کامیابی کو تسلیم نہیں کیا گیا اور صرف دو ماہ بعد ہی گورنر جنرل ملک غلام محمد نے صوبائی حکومت کو برطرف کر کے گورنر راج قائم کر دیا تھا۔

1970ء میں پاکستان کے پہلے ملک گیر انتخابات ہوئے جس میں عوامی لیگ نے مشرقی پاکستان کی قومی اسمبلی کل 162 میں سے 160 سیٹیں جیتیں جو کل 300 سیٹوں میں سادہ اکثریت تھی۔ صوبائی سطح پر عوامی لیگ نے 300 نشستوں میں سے 288 نشستیں جیت لی تھیں جو کلین سویپ تھی۔

1970ء کے انتخابات ، بنگلہ دیش کے قیام کا ریفرنڈم تھا جس کو پاکستان کے فوجی حکمرانوں نے تسلیم نہیں کیا اور 26 مارچ 1971ء کو صدر یحییٰ خان نے غداری کے الزامات لگا کر عوامی لیگ پر پابندی لگا دی تھی۔






Awami League

Thursday, 23 June 1949

Awami League was the founder of Bangladesh..



1992
موٹر ویز
موٹر ویز
1932
سکھر بیراج
سکھر بیراج
1948
ڈاک ٹکٹ
ڈاک ٹکٹ
1956
وزیر اعظم حسین شہید سہروردی
وزیر اعظم حسین شہید سہروردی
1972
بھٹو کا بھاری صنعتوں کو قومیانے کا اعلان
بھٹو کا بھاری صنعتوں کو قومیانے کا اعلان



تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر اہم تاریخی واقعات کو بتاریخ سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ ترتیب سے چند کلکس کے نیچے پیش کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں اہم ترین واقعات اور شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مخصوص صفحات ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!



تاریخ پاکستان ، اہم موضوعات
تحریک پاکستان
تحریک پاکستان
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
شہ سرخیاں
شہ سرخیاں
سیاسی ڈائری
سیاسی ڈائری
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
ذوالفقار علی بھٹوؒ
بے نظیر بھٹو
بے نظیر بھٹو
نواز شریف
نواز شریف
عمران خان
عمران خان
سکندرمرزا
سکندرمرزا
جنرل ایوب
جنرل ایوب
جنرل یحییٰ
جنرل یحییٰ
جنرل ضیاع
جنرل ضیاع
جنرل مشرف
جنرل مشرف
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
انتخابات
انتخابات
امریکی امداد
امریکی امداد
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

چند اہم بیرونی لنکس


پاکستان کی فلمی تاریخ

پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……


ریاض احمد
ریاض احمد
سلیم رضا
سلیم رضا
ناہید
ناہید
ایم اشرف
ایم اشرف
خلیل قیصر
خلیل قیصر


PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan's political, film and media history.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes, and therefor, I am not responsible for the content of any external site.