PAK Magazine
Thursday, 24 June 2021, Week: 25

Pakistan History

سالانہ | ماہانہ | ہفتہ وارانہ | روزانہ | حروفانہ | اہم ترین | تحریک پاکستان | ذاتی ڈائریاں

Pakistan History

1960

جنرل ایوب کی بنیادی جمہوریت

بدھ 17 فروری 1960

Basic Democracy in Pakistan
پاکستان کے پہلے فوجی آمر جنرل ایوب خان کا ایک یادگار ویڈیو انٹرویو جس میں وہ ملک میں مارشل لاء لگانے کی وجوہات اور مستقبل کے منصوبوں کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔ اس انٹرویو میں جہاں انہوں نے سابقہ حکمرانوں پر کرپشن کے الزامات عائد کئے وہاں وہ ایک نئی طرز کی جمہوریت متعارف کروانے اور رائے عامہ کو ہموار کرنے کے لئے ملک بھر میں ایک شاہانہ ٹرین میں سفر کر رہے ہیں۔ وہ اپنے آپ کو ڈکٹیٹر کہلانا پسند نہیں کرتے تھے بلکہ خود کو ایک انقلابی کے طور پر پیش کرتے تھے جو ملک کے مختلف شعبوں میں اصلاحات کرنا چاہتا ہے۔ وہ اپنی متعارف کردہ بنیادی جمہوریت کے نظام کو باقی ایشیائی ممالک کے لئے ایک ماڈل کے طور پر پیش کرنا چاہتے تھے۔ سوال یہ تھا کہ ایک آمر کو جمہوریت کا راگ الاپنے کی کیا ضرورت تھی ، وہ طاقت کے بل بوتے پر حکومت میں آیا تھا اور ایک مطلق العنان حکمران کی طرح حکومت کرتا ، اسے کون روک سکتا تھا؟

اس کا جواب بڑا واضح ہے۔ سرد جنگ کے اس دور میں ایوب خان ، امریکی پٹھو تھے اور اسی کے مفادات کے تحفظ کے لئے پاکستان پر قابض ہوئے تھے جس کے عوض بھاری امریکی مالی اور فوجی امداد سے مالا مال ہوئے تھے۔ وہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی ڈارلنگ تھے لیکن مفاد پرست اور بے ضمیر مغربی ممالک کے لیڈروں کو اپنے عوام اور میڈیا کو بھی جواب دیتا پڑتا تھا جن کے لئے کسی ڈکٹیٹر یا کمیونسٹ ملک کے سربراہ میں فرق کرنا مشکل ہوتا تھا۔ یہی وجہ تھی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے پاکستان کے ہر آمر نے اپنی اپنی جمہوریت کا ڈھونگ رچایا تھا۔ ایوب نے بنیادی جمہوریتوں کی بنیاد پر عوام الناس کو حق رائے دہی سے محروم کیا تو یحییٰ نے انتخابات کروا کر بھی اقتدار چھوڑنے سے انکار کردیا تھا۔ ضیاع نے غیرجماعتی بنیادوں پر جمہوریت کے نام پر لوگوں کو بے وقوف بنایا تو مشرف نے لوٹوں کی مدد سے ڈنگ ٹپائے۔ نقصان اگر ہوا تو صرف پاکستان اور اس کے بے بس عوام کا جنہیں کبھی طاقت کا سرچشمہ نہیں سمجھا گیا اور جو آج بھی کولہو کے کسی بیل کی طرح آنکھوں پہ پٹی بندھے چل چل کر تھک کر چور ہو چکے ہیں اور کسی کو رحم نہیں آرہا۔۔!




Ayub Khan's basic democracy

Wednesday, 17 February 1960

President Ayub Khan's interview about his idea of Basic democracy in Pakistan..



hijazna



World history

Pakistan History

تاریخ پاکستان
پاکستان قومی اتحاد
پاکستان قومی اتحاد
آپریشن سرچ لائٹ
آپریشن سرچ لائٹ
ڈکٹیٹروں کے لئے آئینہ
ڈکٹیٹروں کے لئے آئینہ
جنرل ایوب خان ، صدر بن گئے
جنرل ایوب خان ، صدر بن گئے
قائد اعظمؒ ، گورنر جنرل بنے
قائد اعظمؒ ، گورنر جنرل بنے

Other segments on Pak Magazine

مستقل سلسلے
اخبارات
اخبارات
جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
بھٹو شہیدؒ
بھٹو شہیدؒ
آمر مردود
آمر مردود
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین

Pakistan Media

Some useful external links


Some useful history sites

World links

Some useful links

Cricket links

IT links

Urdu poetry links

Pakistan
Pakistan

وکی پیڈیا پر پاکستان کی تاریخ


Pakistan World Rankings

پاکستان کی عالمی درجہ بندی

پاکستان کی معیشت ، سیاست و ریاست اور دیگر اہم موضوعات میں عالمی درجہ بندیوں کی معلومات کو اپ ڈیٹ کیا جا رہا ہے۔ روایتی حریف بھارت اور جڑواں بھائی بنگلہ دیش کی درجہ بندیوں کے علاوہ دنیا کی ایک مثالی جمہوریت ڈنمارک کو بھی موازنے کے طور پر شامل کیا گیا ہے۔ درجہ بندیوں میں چھوٹے اعداد بہترین اور بڑے بدترین ہیں جبکہ تمام رقوم امریکی ڈالروں میں ہیں۔
آبادی (لاکھوں میں)225213726170058
آبادی کی درجہ بندی528113
رقبہ33792130
فی کس آمدن12851877188858439
فی کس آمدن کی درجہ بندی1541391427
ڈالر ریٹ16071846
معیشت کا حجم2233051
زرمبادلہ کے ذخائر (اربوں میں)135844378
زرمبادلہ کے ذخائر کی درجہ بندی7154631
خوشحالی123591073
انسانی ترقی15413313110
تعلیم1281121552
صحت عامہ123591073
فوجی طاقت1044554
دہشت گردی سے متاثر783385
امن و امان کی صورتحال1531411015
مذہبی وابستگی50543145
ایمانداری124861461
جمہوری روایات10553767
پاسپورٹ کی عزت107851015


Pakistan Exchange Rates

Pakistan Rupee Exchange Rate