PAK Magazine
Monday, 17 January 2022, Week: 03

Pakistan Chronological History

سالانہ | ماہانہ | ہفتہ وارانہ | روزانہ | حروفانہ | اہم ترین | تحریک پاکستان | ذاتی ڈائریاں

Pakistan Chronological History
1971

Yahya Khan decided to step down

Monday, 20 December 1971

The Military Dictator General Yahya Khan on December 20, 1971 decided to step down after the fall of East Pakistan on December 16, 1971..


جنرل یحییٰ کا اقتدار چھوڑنے کا اعلان

سوموار 20 دسمبر 1971ء
Yahya Khan to step down

سانحہ مشرقی پاکستان کبھی رونما نہ ہوتا اگر حقدار کو اس کا حق دے دیا جاتا۔ لیکن یہ بات وقت کے غاصب اور جابر حکمران جنرل یحییٰ خان اور اس کے ٹولے کو سب کچھ لٹ جانے کا بعد سمجھ میں آئی تھی۔۔!

16 دسمبر 1971ء کو سقوط ڈھاکہ کے بعد اہل پاکستان کے لیے یہ تصور کرنا بھی مشکل تھا کہ ہمیں تاریخ کی کتنی بڑی فوجی شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ نہ صرف دنیا کی سب سے بڑی اسلامی مملکت دو لخت ہوئی بلکہ ایک نہ مٹنے والا داغ بھی لگ گیا تھا کہ کہ پاکستان کی (پنجابی) فوج نے اپنے ہی ہم وطن بنگالیوں کی نسل کشی کی تھی اور انھوں نے ہمارے ازلی دشمن لیکن ان کے نجات دہندہ ، بھارت کے تعاون سے نو ماہ کی جنگ آزادی یا خانہ جنگی کے بعد پاکستان سے آزادی حاصل کی تھی۔ سقوط مشرقی پاکستان ، نوے ہزار جنگی قیدی ، جنگی جرائم ، ساڑھے پانچ ہزار مربع میل کا مغربی پاکستان کا مقبوضہ علاقہ، دفاعی ، معاشی ، معاشرتی اور اخلاقی تباہی ، بین الاقوامی بدنامی اور تنہائی اور تاریخی رسوائی ہمارا مقدر بنی تھی۔

اس شرمناک فوجی شکست اور اس کے محرکات پر پردہ ڈالنے کے لیے کبھی اسے ہنود و یہود کی سازش قرار دیا جاتا رہا اور کبھی مشرقی پاکستان کی پندرہ فیصد ہندو آبادی کو مورد الزام ٹھہرایا جاتا رہا ہے۔ اس کے بعد سارا ملبہ پاکستانی قوم کے پہلے منتخب لیڈر اور عظیم محسن جناب ذوالفقار علی بھٹوؒ پر ڈال دیا جاتا کہ اس نے انتخابی نتائج کو تسلیم نہیں کیا اور "ادھر تم ، ادھر ہم " کا نعرہ لگا کر پاکستان توڑ دیا تھا۔ ایسا مضحکہ خیز بیانیہ صرف وہی شخص مان سکتا ہے کہ جو لاعلم اور بے خبر ہو یا اپنے دماغ سے سوچنے سمجھنے کی صلاحیت نہ رکھتا ہو۔

تاریخی حقائق یہ بتاتے ہیں کہ جب جنرل یحییٰ خان اور اس کا غاصب ، جابر اور قابض ٹولہ ، پاکستان کا بیڑا غرق کر چکا تھا تو دم دبا کر فرار کا راستہ تلاش کرنے لگا تھا۔ قوم کے غیض و غضب کی تو اس آمر کو کوئی پرواہ نہیں تھی ، بڑا مسئلہ یہ تھا کہ فوج میں بھی بغاوت کے آثار نمایاں تھے۔ ایسے نازک موقع پر طوعاً قرہاً ، وقتی طور پر اقتدار ، بھٹو کے حوالے کرنے کا فیصلہ کیا گیا جو اصل میں اس ٹولے کے لیے ایک انتہائی ناپسندیدہ شخص تھا۔ بھٹو کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے فوراً وطن واپس بلایا گیا تا کہ اس ڈوبتی ناؤ کو اس کے حوالے کر دیا جائے اور بعد میں اپنے سارے کالے کرتوتوں کا ملبہ بھی اسی کے سر تھوپ دیا جائے۔ اس وقت پاکستانی قوم کا صرف ایک ہی نجات دہندہ تھا جو ذوالفقار علی بھٹوؒ کی شکل میں موجود تھا اور بلاشبہ "قائد اعظم ثانی" تھا۔۔!




Yahya Khan decided to step down
(Daily Mashriq Lahore, 20 December 1971)

Bhutto Called Home
(Daily Mashriq Lahore, 19 December 1971)






تاریخ پاکستان

پاک میگزین ، پاکستانی تاریخ پر اردو میں ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بہ سال اہم تاریخی واقعات چند کلکس کے نیچے ہیں۔ ہر واقعہ پر ایک صفحہ ترتیب دیا گیا ہے جہاں تمام تر معلومات کو تصویر و تحریر ، ویڈیو اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں محفوظ کیا گیا ہے۔ یہ سلسلہ ایک انفرادی کاوش اور فارغ اوقات کا بہترین مشغلہ ہے جو اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا ، ان شاء اللہ۔۔!


World history

تاریخ پاکستان

تازہ ترین


پاکستان کے بارے میں اہم معلومات

Pakistan

پاک میگزین کے دیگر سلسلے

جغرافیائی تاریخ
جغرافیائی تاریخ
سقوط ڈھاکہ
سقوط ڈھاکہ
قائد اعظمؒ
قائد اعظمؒ
بھٹو شہیدؒ
بھٹو شہیدؒ
آمر مردود
آمر مردود
صدر
صدر
وزیر اعظم
وزیر اعظم
آرمی چیف
آرمی چیف
چیف جسٹس
چیف جسٹس
مغلیہ سلطنت
مغلیہ سلطنت
ڈنمارک
ڈنمارک
اٹلی کا سفر
اٹلی کا سفر
حج بیت اللہ
حج بیت اللہ
سیف الملوک
سیف الملوک
شعر و شاعری
شعر و شاعری
ہیلتھ میگزین
ہیلتھ میگزین
فلم میگزین
فلم میگزین
میڈیا لنکس
میڈیا لنکس

چند اہم بیرونی لنکس