PAK Magazine
Tuesday, 24 November 2020, Week: 48, Days: 328


Pakistan History

سالانہ | ماہانہ | ہفتہ وارانہ | روزانہ | حروفانہ | اہم ترین | تحریک پاکستان | ذاتی ڈائریاں

Pakistan History

1949

قرار داد مقاصد

ہفتہ 12 مارچ 1949

The Objectives Resolution 1949
پاکستان کے پہلے وزیر اعظم نوابزادہ لیاقت علی خان ، اپنے چار سالہ دور حکومت میں ملک کو کوئی آئین یا دستور تو نہ دے سکے تھے لیکن ایک قرارداد مقاصد ضرور دی تھی جو دستور ساز اسمبلی نے 12 مارچ 1949ء کو منظور کی تھی۔ اس کا مسودہ علامہ شبیر احمد عثمانی نے تیار کیا تھا۔ اس وقت متحدہ پاکستان کی پندرہ فیصد آبادی غیر مسلم تھی جس نے اس قرارداد کی سخت الفاظ میں مذمت کی تھی کیونکہ پاکستان کے شہریوں کو مسلمانوں اور اقلیتوں میں تقسیم کر کے مذہبی تعصب کی بنیاد رکھ دی گئی تھی۔ اس قرارداد کی وجہ سے قائد اعظمؒ کے نامزد کردہ پاکستان کے پہلے وزیر قانون جوگندر ناتھ منڈل اتنے بددل ہوئے تھے کہ ملک ہی چھوڑ کر چلے گئے تھے۔

قرارداد مقاصد ، آئین کا ابتدائی خاکہ تو ہو سکتی تھی متبادل نہیں۔ یہ محض زبانی جمع خرچ تھا جو دستور سازی میں غفلت کی ایک بدترین مثال تھی۔ اگر اس وقت آئین بن جاتا تو شاید آج ہماری تاریخ مختلف ہوتی۔ دستور سازی میں مشکلات کی بڑی وجہ اسمبلی میں بنگالی اراکین کی اکثریت تھی جن کی موجودگی میں جمہوری طریقے سے پاکستان کی اشرافیہ اپنی مرضی کا دستور مرتب نہیں کر سکتی تھی ، اسی لئے یہ مذہبی کارڈ کھیل کر بنگالیوں کو بے بس کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ یاد رہے کہ 1945/46ء کے انتخابات کے نتیجے میں وجود آنے والی اس نیم منتخب اسمبلی کو 1955ء میں گورنر جنرل ملک غلام محمد نے ایک آمرانہ حکم سے توڑ دیا تھا۔ ون یونٹ کی بنیاد پر ایک نئی اسمبلی وجود میں آئی تھی جس نے 1956ء کا آئین منظور کیا تھا اور جس کا مشرقی پاکستان کے نمائندوں نے بائیکاٹ کیا تھا۔

قرارداد مقاصد کے چند اہم نکات کچھ اس طرح سے تھے:

  1. حاکمیت صرف اللہ تعالیٰ کی ہے۔ حکومت پاکستان ، اس مقدس امانت کو عوام کے منتخب نمائندوں کے ذریعے استعمال کرے گی اور اسلام کے سنہری جمہوری اصولوں پر عمل کرے گی۔
  2. پاکستان کا نظام حکومت وفاقی اور طرز حکمرانی شورائی ہو گا۔ صوبوں کو خود مختاری حاصل ہو گی۔
  3. عدلیہ آزاد اور انتظامیہ سے الگ ہو گی اور نظام عدل مکمل طور پر محفوظ ہو گا۔
  4. اقلیتوں اور پسماندہ طبقات کے جائز حقوق ، مذہبی اور ثقافتی آزادی کا پورا تحفظ کیا جائے گا۔
  5. بنیادی حقوق اور اظہار خیال کی آزادی ہو گی۔ وفاقی علاقوں کی حاکمیت ، آزادی کے علاوہ بری ، بحری اور فضائی حدود کا تحفظ کیا جا ئے گا۔ اہل ِپاکستان کی فلاح وبہبود اور ترقی و خوشحالی کے مواقع فراہم کئے جائیں گے تاکہ وہ اقوام عالم کی صف میں اپنا جائز مقام حاصل کرسکیں اور امن عالم کے قیام اور بنی نوع انسان کی ترقی میں اپنا بھر پور کردار ادا کر سکیں۔


The Objectives Resolution

Saturday, 12 March 1949

The Objectives Resolution was adopted by the Constituent Assembly of Pakistan on March 12, 1949. It was drafted by Alama Shabbir Ahmad Usmani..





تاریخ پاکستان

پاک میگزین پر پاکستان کی تاریخ کو ایک منفرد انداز میں پیش کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ ہر اہم تاریخی واقعہ کے لئے ایک صفحہ مختص ہے جس پر متعلقہ موضوع پر تمام تر معلومات جمع کی گئی ہیں۔ ان میں تحریر و تصاویر کے علاوہ یادگار دیڈیوز ، آئیڈیوز ، اخباری تراشے اور متعلقہ لنکس وغیرہ شامل ہیں۔ تاریخی واقعات کو جہاں اردو اور انگلش میں سرچ کیا جاسکتا ہے وہاں سالانہ ، ماہانہ ، ہفتہ وارانہ ، روزانہ اور حروفانہ فہرستیں بھی بنائی گئی ہیں۔ جیسے جیسے ڈیٹابیس میں مزید واقعات کا اندراج ہو گا ، یہ تمام فہرستیں اپ ڈیٹ ہوتی رہیں گی۔

یہ ویب سائٹ ایک انفرادی کاوش ہے جو فارغ اوقات کا ایک بہترین مشغلہ اور پاکستان کی تاریخ کو آن لائن محفوظ رکھنے کا ایک عظیم منصوبہ بھی ہے۔ تمام تر تحریر و تحقیق ، خیالات ، تبصرے اور تجزیئے میرا ذاتی فعل ہیں جو زندگی بھر کے تاریخی علم کا نچوڑ اور ایک تعمیری اور اصلاحی سوچ کے مظہر ہیں۔


تازہ ترین اپ ڈیٹس

تازہ ترین ویڈیو

1962ء کا آئین

1962 Constitution

1962 Constitution was presidential form of government with absolute powers vested in the President..

Pak Broad Cor

World history

Pakistan Media


BBC Urdu Global websiteDW Urdu Global websiteVOA Urdu Global website Dawn, Karachi NewspaperDunya, Lahore NewspaperJang, Karachi NewspaperKhabrain, Lahore NewspaperPakistan, Lahore NewspaperUmmat, Karachi Newspaper ARY News TVDunya News TVExpress News TVGeo News TVGNN News TVNeo News TVPtv News TV
تازہ ترین اپ ڈیٹس




پاکستان کی عالمی درجہ بندی

پاکستان کی معیشت ، سیاست و ریاست اور دیگر اہم موضوعات میں عالمی درجہ بندیوں کی معلومات کو اپ ڈیٹ کیا جا رہا ہے۔ روایتی حریف بھارت اور جڑواں بھائی بنگلہ دیش کی درجہ بندیوں کے علاوہ دنیا کی ایک مثالی جمہوریت ڈنمارک کو بھی موازنے کے طور پر شامل کیا گیا ہے۔ درجہ بندیوں میں چھوٹے اعداد بہترین اور بڑے بدترین ہیں جبکہ تمام رقوم امریکی ڈالروں میں ہیں۔
معیشت
فی کس آمدن1.3882.1711.90559.795
فی کس آمدن کی درجہ بندی1511391439
معیشت کا حجم2333058
ڈالر ریٹ16073856
زرمبادلہ کے ذخائر (اربوں میں)125413754
زرمبادلہ کے ذخائر کی درجہ بندی7454738

فلاحی ریاست
خوشحالی 123491322
انسانی ترقی15212913511
تعلیم1281121552
صحت عامہ3835323
ایمانداری120801461

سیاست و ریاست
آبادی528112
رقبہ3379211
مذہبی وابستگی50543145
جمہوری روایات10851807
پاسپورٹ کی عزت106851015


Pakistan Rupee Exchange Rate