PAK Magazine | An Urdu website on the Pakistan history
Friday, 24 May 2024, Day: 145, Week: 21

PAK Magazine |  پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان ، ایک منفرد انداز میں


پاک میگزین پر تاریخِ پاکستان

Annual
Monthly
Weekly
Daily
Alphabetically

منگلوار 23 اپریل 1974

پہلی آئینی ترمیم: سقوطِ مشرقی پاکستان

پہلی آئینی ترمیم  مشرقی پاکستان کے بارے میں تھی
پہلی آئینی ترمیم
مشرقی پاکستان کے بارے میں تھی

23 اپریل 1974ء کو آئینِ پاکستان میں کی گئی پہلی آئینی ترمیم میں پاکستان کی جغرافیائی حدود کا ازسرنو تعین کیا گیا جس میں مشرقی پاکستان کو پاکستان کے نقشہ سے حذف کر دیا گیا جو 16 دسمبر 1971ء کو بنگلہ دیش بن گیا تھا اور جس کو 22 فروری 1974ء کو پاکستان نے بھی ایک آزاد ملک کے طور پر تسلیم کر لیا تھا۔

پہلی آئینی ترمیم کیسے ہوئی؟

بھٹو حکومت نے بنگلہ دیش کو تسلیم کرنے کے لیے 7 جولائی 1974ء کو باقاعدہ طور پر سپریم کورٹ سے اجازت طلب کی تھی۔ عدالتِ عالیہ کی منظوری کے بعد 10 جولائی 1974ء کو قومی اسمبلی نے بھی بنگلہ دیش کو تسلیم کرنے کی اجازت دے دی تھی۔

23 اپریل 1974ء کو قومی اسمبلی نے یہ ترمیم صفر کے مقابے میں 104 وؤٹوں کی اکثریت سے منظور کی۔ دو بڑی اپوزیشن جماعتوں، نیشنل عوامی پارٹی (نیپ) اور جمیعت العلمائے اسلام نے بھی اس ترمیم کے حق میں وؤٹ دیے جبکہ 13 ارکانِ پارلیمنٹ نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا تھا۔

25 اپریل 1974ء کو سینٹ نے بھی اس آئینی ترمیم کی منظوری دے دی تھی۔ 25 وؤٹ آئینی ترمیم کے حق میں جبکہ دو وؤٹ مخالفت میں آئے تھے۔ 4 مئی 1974ء کو صدر نے منظوری دی اور 8 مئی 1974ء کو اس پہلی آئینی ترمیم کا سرکاری گزٹ جاری ہوا تھا۔

پہلی آئینی ترمیم کی عبارت

اسلامی جمہوریہ پاکستان کے آئین کے آرٹیکل ایک میں شق (2)، (3) اور (4) کے مطابق پاکستان ان علاقوں پر مشتمل ہوگا:

  • صوبہ بلوچستان، شمال مغربی سرحدی صوبہ، صوبہ پنجاب اور صوبہ سندھ
  • اسلام آباد کیپٹل ایریا، جسے بعد میں وفاقی دارالحکومت کہا جائے گا
  • وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے اور ایسی ریاستیں اور علاقے جو پاکستان میں الحاق یا کسی دوسری صورت میں شامل ہیں یا ہو سکتے ہیں۔
  • قومی اسمبلی، نئی وفاقی ریاستوں یا علاقوں کے لیے حسبِ ضرورت قانون سازی کر سکتی ہے۔
اس کے علاوہ عدلیہ اور فوج کے بارے میں متعدد وضاحتوں کے علاوہ آرٹیکل 17 میں یہ اہم ترمیم بھی کی گئی جس کو بنیاد بنا کر بھٹو حکومت نے نیشنل عوامی پارٹی (نیپ) پر پابندی لگائی تھی:
  • ہر شہری کو جو سرکاری ملازم نہیں، اسے کسی سیاسی پارٹی سے تعلق رکھنے یا اس کا رکن بننے کا حق حاصل ہوگا۔
  • پاکستان کی خودمختاری یا سالمیت کے خلاف کام کرنے والی کسی بھی سیاسی پارٹی پر حکومت پابندی لگا سکتی ہے لیکن اعلان کے پندرہ روز کے اندر معاملہ سپریم کورٹ تک پہنچائے گی جہاں حتمی فیصلہ ہوگا۔
  • ہر سیاسی جماعت، قانون کے مطابق اپنے فنڈز کے ذرائع کا حساب دے گی۔






The 1st Constitution Amendment

Tuesday, 23 April 1974

The 1st Constitution Amendments about the East Pakistan was made on April 23, 1974..




پاکستان کی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ

پاک میگزین ، پاکستان کی سیاسی تاریخ پر ایک منفرد ویب سائٹ ہے جس پر سال بسال اہم ترین تاریخی واقعات کے علاوہ اہم شخصیات پر تاریخی اور مستند معلومات پر مبنی مخصوص صفحات بھی ترتیب دیے گئے ہیں جہاں تحریروتصویر ، گرافک ، نقشہ جات ، ویڈیو ، اعدادوشمار اور دیگر متعلقہ مواد کی صورت میں حقائق کو محفوظ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

2017ء میں شروع ہونے والا یہ عظیم الشان سلسلہ، اپنی تکمیل تک جاری و ساری رہے گا، ان شاءاللہ



پاکستان کے اہم تاریخی موضوعات



تاریخِ پاکستان کی اہم ترین شخصیات



تاریخِ پاکستان کے اہم ترین سنگِ میل



پاکستان کی اہم معلومات

Pakistan

چند مفید بیرونی لنکس



پاکستان فلم میگزین

پاک میگزین" کے سب ڈومین کے طور پر "پاکستان فلم میگزین"، پاکستانی فلمی تاریخ، فلموں، فنکاروں اور فلمی گیتوں پر انٹرنیٹ کی تاریخ کی پہلی اور سب سے بڑی ویب سائٹ ہے جو 3 مئی 2000ء سے مسلسل اپ ڈیٹ ہورہی ہے۔


پاکستانی فلموں کے 75 سال …… فلمی ٹائم لائن …… اداکاروں کی ٹائم لائن …… گیتوں کی ٹائم لائن …… پاکستان کی پہلی فلم تیری یاد …… پاکستان کی پہلی پنجابی فلم پھیرے …… پاکستان کی فلمی زبانیں …… تاریخی فلمیں …… لوک فلمیں …… عید کی فلمیں …… جوبلی فلمیں …… پاکستان کے فلم سٹوڈیوز …… سینما گھر …… فلمی ایوارڈز …… بھٹو اور پاکستانی فلمیں …… لاہور کی فلمی تاریخ …… پنجابی فلموں کی تاریخ …… برصغیر کی پہلی پنجابی فلم …… فنکاروں کی تقسیم ……

پاک میگزین کی پرانی ویب سائٹس

"پاک میگزین" پر گزشتہ پچیس برسوں میں مختلف موضوعات پر مستقل اہمیت کی حامل متعدد معلوماتی ویب سائٹس بنائی گئیں جو موبائل سکرین پر پڑھنا مشکل ہے لیکن انھیں موبائل ورژن پر منتقل کرنا بھی آسان نہیں، اس لیے انھیں ڈیسک ٹاپ ورژن کی صورت ہی میں محفوظ کیا گیا ہے۔

پاک میگزین کا تعارف

"پاک میگزین" کا آغاز 1999ء میں ہوا جس کا بنیادی مقصد پاکستان کے بارے میں اہم معلومات اور تاریخی حقائق کو آن لائن محفوظ کرنا ہے۔

Old site mazhar.dk

یہ تاریخ ساز ویب سائٹ، ایک انفرادی کاوش ہے جو 2002ء سے mazhar.dk کی صورت میں مختلف موضوعات پر معلومات کا ایک گلدستہ ثابت ہوئی تھی۔

اس دوران، 2011ء میں میڈیا کے لیے akhbarat.com اور 2016ء میں فلم کے لیے pakfilms.net کی الگ الگ ویب سائٹس بھی بنائی گئیں لیکن 23 مارچ 2017ء کو انھیں موجودہ اور مستقل ڈومین pakmag.net میں ضم کیا گیا جس نے "پاک میگزین" کی شکل اختیار کر لی تھی۔

سالِ رواں یعنی 2024ء کا سال، "پاک میگزین" کی مسلسل آن لائن اشاعت کا 25واں سلور جوبلی سال ہے۔




PAK Magazine is an individual effort to compile and preserve the Pakistan history online.
All external links on this site are only for the informational and educational purposes and therefor, I am not responsible for the content of any external site.